یوریا غائب کرنے میں حکومت کا ہاتھ، زمیندار بلیک میں کھاد خرید نے پر مجبور 

یوریا غائب کرنے میں حکومت کا ہاتھ، زمیندار بلیک میں کھاد خرید نے پر مجبور 

  

 اسلام آ باد (آئی ا ین پی) پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما نوید قمر نے کہا ہے کہ پاکستان میں ہمیشہ زراعت کو بحران کا سامنا رہا، ملک میں یوریا کی قلت ہے یوریا کو غائب کرنے میں حکومت کا ہاتھ ہے، کھاد والا ٹرک کہیں سے گزرتا ہے تو وہاں لوٹ مار شروع ہو جاتی ہے، زمیندار بلیک میں کھاد خریدنے پر مجبور ہیں، پنجاب حکومت نے ایک شناختی کارڈ پر ایک بیگ دینے کی پالیسی سے پورے خاندان کو خراب کیا جا رہا ہے۔ پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما نوید قمر نے شازیہ مری کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ کسانوں کے حق میں اکیس اور چوبیس جنوری کو ٹریکٹر مارچ کیا جائے گا، تمام کسان تنظیموں کو دعوت دیتے ہیں کہ وہ ہمارے اجتجاج میں شریک ہوں، اکیس کو ساہیوال میں ٹریکٹر مارچ کیا جائے گا، چوبیس کو پورے ملک میں ٹریکٹر احتجاج کریں گے۔ پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما نے کہا کہ جب تک زرعی پیداوار نہیں بڑھے گی ملک ترقی نہیں کر سکتا، ملک کا دیوالیہ ہو چکا ہے، زراعت پر خودکفیل ہونا اصل کام ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتیں ہمارے اس مقصد میں شریک ہوں،دوسری جانب پاکستان پیپلزپارٹی کی رہنما شازیہ مری نے نوید قمر کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ زراعت اہم شعبہ ہے، منی بجٹ کیخلاف پارلیمنٹ کے اندر اور باہر احتجاج کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہر طریقے سے احتجاج کو جاری رکھیں گے، ستائیس فروری کے مارچ سے قبل کسانوں کے معاملے کا حل درکار تھا، کسانوں کے معاملے پر کمیٹی تشکیل دیدی ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -