یوریا کھاد کی مصنوعی قلت کیخلاف آبادگار سڑکوں پر نکل آئے 

یوریا کھاد کی مصنوعی قلت کیخلاف آبادگار سڑکوں پر نکل آئے 

  

سکھر(ڈسٹرکٹ رپورٹر)یوریا کھاد کی مصنوعی قلت کے خلاف آبادگار سڑکوں پر نکل آئے، ٹائر نذر آتش کر کے قومی شاہراہ پر دھرنا، ٹریفک کی آمد و رفت معطل ہو گئی، ہمارے جائز مطالبات تسلیم کئے جائیں بصورت دیگر احتجاج کا سلسلہ جاری رہے گا، آبادگاروں کا اعلان، تفصیلات کے مطابق سکھر کی تحصیل صالح پٹ کے آبادگاروں نے یوریا کھاد کی مصنوعی قلت اور آبادگاروں کے معاشی قتل عام کے خلاف صالح پٹ کی قومی شاہراہ پر ٹائر نذر آتش کر کے احتجاجی مظاہرہ کیا اور نعریبازی کی مظاہرے کی قیادت آبادگار رہنما اشرف خان بھنبھرو سمیت دیگر کر رہے تھے اس موقع پر مذکورہ رہنماؤں اور آبادگاروں کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت بلخصوص محکمہ زراعت سندھ کے غریب آبادگاروں کا معاشی قتل عام کرنے پر مصروف دیکھائی دیتی ہے،  سندھ کے آبادگار بھوکے مر رہے ہیں محکمہ زراعت اور دیگر محکموں کی ملی بھگت سے سندھ کے کسانوں کی یورا کھاد افغانستان اسمگل کی جارہی ہے جو سراسر ظلم و زیادتی ہے، آبادگاروں کے مسائل حل کرنے کے بجائے محکمہ زراعت کے افسران سیاسی اثر و سوخ کی بنا پر آواز بلند کرنے والے آبادگاروں کو دھمکیاں دے رہے ہیں مصنوعی قلت کے باعث سندھ کے غریب آبادگار مہنگے داموں یوریا کھاد خرید نے پر مجبور ہیں سندھ میں کھاد کا بحران حکومت کی نااہلی ہے، مظاہرین نے بالا حکام سے نوٹس لیکر سندھ کے آبادگاروں کو یوریا کھاد کی فراہمی یقینی بنانے کا مطالبہ کرتے ہوئے اعلان کیا کہ اگر ہمارے جائز مطالبات تسلیم نہ کئے تو احتجاج کا دائرہ وسیع کر دیا جائیگا۔

مزید :

صفحہ آخر -