نوکری سکینڈل: وزیراعلٰی کا پولیس کوکارروائی کا مکمل اختیار، 4افراد گرفتار

  نوکری سکینڈل: وزیراعلٰی کا پولیس کوکارروائی کا مکمل اختیار، 4افراد گرفتار

  

        ڈیرہ غازیخان (بیورو رپورٹ،نمائندہ خصوصی)ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ڈیرہ غازی خان محمد علی وسیم نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے جاب سکینڈل تونسہ کے گروہ اور ملوث افراد کیخلاف بلا امتیاز کارروائی کیلئے پولیس کو مکمل اختیار دیا ہے،پولیس نے اس معاملہ میں خاتون اور نوسرباز گروہ کے تین افراد گرفتار کرلئے،جعلساز گروہ 2008 سے متحرک تھا،ہیڈ مسٹریس کلثوم حنا کے گھر اور سکول سے اہم دستاویزات جعلی مہریں،لیپ ٹاپ دیگر آلات اور لاکھوں روپے بھی  برآمد کرلئے گئے ہیں،حق داروں کو ان کی رقوم واپس دلائیں گے۔ڈی پی او نے کہا کہ کلثوم حنا جہاں بھی تعینات رہیں،نوکری کے جھانسے دے کر سادہ لوح عوام سے پیسے بٹورتی رہی،اس سلسلہ میں 30سے زائد افراد سے تفتیش کی گئی اور مزید تحقیقات کا سلسلہ جاری ہے،اے ایس پی آفس تونسہ میں منعقدہ پریس کانفرنس میں اے ایس پی کائنات اظہر،ڈی ایس پیز رانا اعجاز،بخت نصر اور تحقیقاتی ٹیم بھی موجود تھی۔ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر نے کہا کہ پولیس کو شکاتیں موصول ہو رہی تھیں کہ کچھ لوگ وزیر اعلیٰ  اور ان کے بھائیوں کا نام لے کرسادہ لوح لوگوں کو نوکریوں کا جھانسہ دے کران سے خطیر رقوم بٹور رہے ہیں،اس حوالے سے وزیر اعلیٰ پنجاب نے نوٹس لیتے ہوئے انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب کو اس سکینڈل کو بے نقاب کرنے اور دوران تفتیش سامنے آنے والے تمام حقائق کو عوام کے سامنے لانے کا حکم دیا۔وزیر اعلیٰ پنجاب کے احکامات کی روشنی میں انسپکٹر جنرل آف پولیس پنجاب نے ریجنل پولیس آفیسر ڈیرہ غازیخان ریجن کو ہدایات جاری کیں۔اس حوالے سے ایک سپیشل ٹیم تشکیل دی گئی جس نے انتھک محنت کرکے اس گینگ کو بے نقاب کیا ہے۔ملوث گروہ کے یامین  سکنہ مکول کلاں کو گرفتار کیا گیا جس کے انکشاف پر سید تمکین شاہ  سکنہ منگروٹھہ شرقی اور دو افرادسے تفتیش کی گئی،ان کے انکشاف پر کلثوم حِنا ہیڈمسٹریس گورنمنٹ گرلز ہائی سکول قصبہ سوکڑ کو گرفتار کیا گیا۔ملوث گینگ سادہ لوح لوگوں کو نوکری کا جھانسہ اور جعلی نوکری کے آرڈرز دے کر پیسے بٹورتے تھے۔کلثوم  حنا کیخلاف اس وقت تک70کے قریب متاثرین کی درخواستیں پولیس کو موصول ہوچکی ہیں، مزید تحقیقات کی جارہی ہیں۔متاثرین کورقوم واپس دلائی جائینگی۔

مزید :

صفحہ اول -