نجی ہسپتال سے بچوں کی 11 کھوپڑیاں اور 54 ہڈیاں مل گئیں

نجی ہسپتال سے بچوں کی 11 کھوپڑیاں اور 54 ہڈیاں مل گئیں
نجی ہسپتال سے بچوں کی 11 کھوپڑیاں اور 54 ہڈیاں مل گئیں

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت میں پولیس نے ایک پرائیویٹ ہسپتال سے غیرقانونی اسقاط حمل کے ذریعے قتل کر دیئے گئے بچوں کی کھوپڑیاں اور ہڈیاں برآمد کر لیں۔ انڈیا ٹوڈے کے مطابق پولیس نے 11کھوپڑیاں اور 54ہڈیاں ریاست مہاراشٹر کے ضلع وردھا کے ایک نجی ہسپتال سے برآمد کی ہیں اور یہ سب کی سب ماں کے پیٹ میں مار دیئے گئے بچوں کی ہیں، جنہیں غیرقانونی اسقاط حمل کے ذریعے موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق پولیس کو اس ہسپتال میں غیرقانونی اسقاط حمل کیے جانے کی اطلاع ملی تھی جس پر چھاپہ مارا گیا۔ جب پولیس نے ہسپتال کی حدود میں بنائے گئے ایک بائیو گیس پلانٹ کو چیک کیا تو اس میں سے یہ ہڈیاں برآمد ہو گئیں۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ان ہڈیوں اور کھوپڑیوں سے بظاہر لگتا ہے کہ ان بچوں کو حمل کے آخری وقت میں کہیں ماﺅں کے پیٹ سے نکال کر قتل کیا گیا کیونکہ ان باقیات سے لگتا ہے کہ بچے مکمل بن چکے تھے۔تمام کھوپڑیاں اور ہڈیاں فرانزک کے لیے لیبارٹری بھجوا دی گئی ہیں۔ ہسپتال سے ایک ڈاکٹر اور ایک نرس کو حراست میں بھی لیا گیا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -