ریلوے سٹیشن کے باہر غیر قانونی پارکنگ سٹینڈ ،تجاوزات کی بھر مار،ٹریفک درہم برہم

ریلوے سٹیشن کے باہر غیر قانونی پارکنگ سٹینڈ ،تجاوزات کی بھر مار،ٹریفک درہم ...

  

لاہور(سٹاف رپورٹر) لاہور ریلوے اسٹیشن کے باہر اور اس کے گردونواح میں غیر قانونی پارکنگ اسٹنڈوں،نوسربازوں اور تجاوزات کی بھر مار ۔ جس کے باعث کئی کئی فٹ چوڑی سڑکیں سکڑ کر رہ گئی ہیں اور ٹریفک کا نظام درہم برہم ہو کر رہ گیا ہے۔ آئے روز حادثات معمول بن گئے بلکہ پارکنگ مافیا کے علاوہ پرچی مافیا نے بھی شہریوں کا جینا محال کر دیا ہے۔ سڑک کنارے نو پارکنگ کے بورڈ تلے موٹر سائیکل پارک کی جارہی ہیں اور ان سے پارکنگ فیس بھی وصول کی جارہی ہے۔ ریڑیھی بانوں نے سڑک پر قبضہ کر رکھا ہے غیر قانونی اقدام پر ٹریفک وارڈنز اور ریلوے انتظامیہ خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں اور بااثر مافیا کے خلاف اپریشن سے گریزاں ہیں یہ صورتحال گذشتہ روز”پاکستان“ سروے کے دوران سامنے آئی۔ جمعتہ المبارک کے روز دیکھا گیا کہ ریلوے اسٹیشن کے باہر ٹریفک وارڈنر اور ریلوے ملازمین کی بڑی تعداد ڈیوتی سرانجام دے رہی مگر اس کے باوجود آئین و قوانین سمیت اخلاقی قدروں کی دھجیاں بکھیری جارہی ہیں ریلوے اسٹیشن کے باہر چند قدم کے فاصلے پر شہری جو اپنے عزیز و اقارب کو ریلوے اسٹیشن پر چھوڑنے کی غرض سے آتے ہیں وہ یہاں پر گاڑی کھڑی کر دیتے ہیں جبکہ تھوڑے ہی فاصلے پر ریلوے اسٹیشن کے گردونواح میں پارکنگ مافیا غیر قانونی پارکنگ اسٹینڈ بناکر گاڑی پارک کروا رہے ہیں اور باقاعدہ پارکنگ اسٹینڈ کے ٹوکن جاری کررہے ہیں۔ بتایا گیا کہ ریلوے انتظامیہ نے موٹر سائیکل اور گاڑیاں پارک کرنے کیلئے جگہ مختص کی ہے اور اسے ٹھیکے پر دیا ہے مگر ٹھیکدار مافیا قواعد وضوابط کے مطابق مختص جگہ پر گاڑیاں پارک نہیں کروا رہے اورمعاہدے کی سنگین خلاف ورزی کرتے ہیں مختص جگہ سے باہر نکل کرریلوے اسٹیشن کے گردونواح میں گاڑیاں پارک کروا رہے ہیں۔ علاوہ ازیں ریلوے اسٹیشن کے باہر نوسربازوں نے ڈیرے جما رکھے ہیں۔ سرعام نشہ کے ٹیکے لگاتے رہتے ہیں اور نشہ سے بھرے سگریٹ پیتے ہیں جبکہ ان کی موجودگی کے باعث مسافروں اور شہریوں کی جیبیں محفوظ نہیں ہیں۔ اور ریلوے پولیس مذکورہ نوسربازوں کےخلاف کارروائی سے گریزاں ہیں دریں اثناءجگہ جگہ تجاوزات کے اڈے قائم ہیں ریڑھی بانوں نے ریڑھیاں لگا رکھی ہیں ۔ کی وجہ سے ٹریفک حادثات میں اضافہ ہورہا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -