پاکستان میں دودھ کی پیداوار دنیا میں کم ترین سطح پر ہے، اسد ظہور

پاکستان میں دودھ کی پیداوار دنیا میں کم ترین سطح پر ہے، اسد ظہور

  

لاہور(کامرس رپورٹر)ایگری بزنس سپورٹ فنڈکے ڈپٹی چیف آف پارٹی اسد ظہور نے کہا ہے کہ پاکستان دودھ کی پیداواریت کے لحاظ سے دنیا میں کم ترین سطح پر ہے، تجارتی بنیادوں پر ڈیری فارمنگ کے ذریعے پیداوار کو دو گنا بڑھا کر ملکی پوٹینشل سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں، نوجوانوں کو ڈیری سیکٹر کی اہمیت کو اجاگر کر کے اسے جدید خطوط پر استوار کرنے کے قابل بنانا ہوگا۔ وہ گزشتہ روز امریکی ادارہ برائے عالمی امداد(یو ایس ایڈ) کے اشتراک سے ہونیوالے پانچ روز تربیتی پروگرام کی اختتامی تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ پروگرام کا مقصد پاکستان میں ڈیری سیکٹرکی اہمیت اور افادیت پر روشنی ڈالتے ہوئے اسے جدید ترین خطوط پر استوار کرنے کے حوالے سے آگہی فراہم کرنا تھا۔ اس تربیتی پروگرام میں تقریباً ڈیڑھ درجن کے قریب افراد نے حصہ لیا ۔ تقریب تقسیم اسناد کے موقع پر اسد ظہور نے مزید کہا کہ پاکستانی معیشت میں ڈیری کا شعبہ بنیادی اہمیت کا حامل ہے جس کو مد نظر رکھتے ہوئے ایگری بزنس سپورٹ فنڈ نے اس شعبے کی ترقی کیلئے 5 سالہ پروگرام ترتیب دیا ہے اور پہلے مرحلے میں 20 کے قریب نوجوانوں کو ڈیری شعبے کو ترقی کی جانب گامزن کرنے کی تربیت دی گئی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پاکستان دودھ دینے والے جانوروں کی تعداد کے لحاظ سے دنیا کا تیسرا یا چوتھا بڑا ملک ہے جبکہ دودھ کی پیداواریت کے لحاظ سے ہم دنیا میں کم ترین سطح پر ہیں ۔

مزید :

صفحہ آخر -