پاکستانی طلبہ کو ویزے ترجیح بنیادوں پردیے جارہے ہیں

پاکستانی طلبہ کو ویزے ترجیح بنیادوں پردیے جارہے ہیں
پاکستانی طلبہ کو ویزے ترجیح بنیادوں پردیے جارہے ہیں

  

 اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکی سفارت خانے کی ویزا قونصلر سعدیہ نیازی کا کہنا ہے کہ پاکستانی طلبہ کو ویزے ترجیحی بنیادوں پر دیئے جا رہے ہیں۔ انہوں نے خبردار کیا کہ پاکستانی لوگ امریکی ڈی وی لاٹری پر پیسے ضائع نہ کریں کیونکہ پاکستان تو اس لاٹری میں شامل ہی نہیںہے ۔ایک انٹر ویو میں امریکی ویزا قونصلر سعدیہ نیازی کا کہنا تھا کہ سٹوڈنٹ ویزا کی درخواست پر دویاتین دن میں انٹرویو ہو جاتا ہے، جبکہ درخواست کی فیس 160 ڈالر ہے۔ سٹوڈنٹس کو چاہئے کہ وہ انٹرنیٹ سے درخواست ڈاﺅن لوڈ کریںاور اسے پر کر کے امریکن ایکسپریس یا اسپیڈیکس کے دفتر جائیں،وہاں سے ان کا انٹرویو شیڈول کر دیا جائے گا۔ امریکی ویزا قونصلر نے بتایا کہ اکثر سٹوڈنٹ کے ویزے اس لئے مسترد کر دےئے جاتے ہیں کہ طلبہ ویزا آفیسر کو صحیح طرح سمجھا نہیں پاتے، محض کاغذات کا پلندہ ساتھ لے جانا ضروری نہیں۔ انٹرویو کا سب سے اہم حصہ یہ ہے کہ آپ ویزا آفیسر کو سمجھا سکیں، کہ آپ کیوں جارہے ہیں، کہاں جائیں گے اور کیا کریں گے۔ پاکستانی نژاد یو ایس ویزا قونصلر سعدیہ نیازی نے بتایا کہ عام پاکستانیوں کو امریکہ جانے سے تین ماہ قبل ویزا درخواست دینی چاہئے، انہیں نوکری جبکہ بزنس کے کاغذات یا سیاحت کے حوالے سے سفری منصوبہ اور انوی ٹیشن لیٹرز بھی دکھانے چاہئیں۔

مزید :

تعلیم و صحت -