کراچی :طیارے پر بیٹھانے والے بارہ پل انتہائی خطر ناک ہو گئے

کراچی :طیارے پر بیٹھانے والے بارہ پل انتہائی خطر ناک ہو گئے
کراچی :طیارے پر بیٹھانے والے بارہ پل انتہائی خطر ناک ہو گئے

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) قائد اعظم انٹر نیشنل ایئرپورٹ پر مسافروں کو طیارے تک پہنچانے والے بارہ پل انتہائی خطرناک ہوگئے ہیں جو کسی بھی وقت بڑے حادثے کا سبب بن سکتے ہیں۔ کراچی ایئرپورٹ پر جہاز کے سفر کے آغاز سے ہی مسافروں کو خطرناک صورت کا سامنا ہوتا ہے کیو نکہ ناقص برج کا استعمال مسافروں کو جہاز پر لے جانے کیلئے جاری ہے۔تفصیلات کے مطابق کراچی کے جناح انٹر نیشنل ایئرپورٹ پرمسافروں کو طیارے میں بیٹھانے والے بارہ پل انتہائی خطرناک ہوچکے ہیں۔1992ءمیں لگائے گئے ایوو برج اپنی مدت پوری کر چکے ہیں اوردو ماہ قبل کراچی ایئرپورٹ پر قومی ایئرلائن کے طیارے پر ایوو برج کے گرنے سے طیارے کو نقصان پہنچا تھا۔ یہ برج مسافروں کو ایئرپورٹ لاو¿نج سے جہاز تک لے جانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے ۔ پرانی ٹیکنالوجی کے بنے ہوئے ہائیڈرولک برج جو دنیا بھر کے ایئرپورٹ پر ختم کئے جاچکے ہیں ، کراچی یئرپورٹ پر ان برجوں کو استعمال کیا جارہا ہے۔ماہر ایوی ایشن کا کہنا ہے کہ حادثات کے اہم اسباب کی وجہ ناقص برج ہی بتائے جاتے ہیں۔ سول ایوی ایشن اتھارٹی کا کہنا ہے کہ ایک برج کی تعمیر پر تیس سے پینتیس کروڑ روپے کی لاگت آتی ہے اور بجٹ کی منظوری نہ ہونے کی وجہ سے خطرناک پل ہی زیر استعمال ہے۔

مزید :

سائنس اور ٹیکنالوجی -