آزادی مارچ کے لئےحکمرانوں کی اجازت لینا ضروری نہیں :عمران خان

آزادی مارچ کے لئےحکمرانوں کی اجازت لینا ضروری نہیں :عمران خان
آزادی مارچ کے لئےحکمرانوں کی اجازت لینا ضروری نہیں :عمران خان

  

چنیوٹ (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ حکمران جو مرضی کرلیں 14اگست کو آزادی مارچ نکال کر قوم کی نفرت کا پیغام حکمرانوں پر واضح کردیں گے ،مارچ میں تمام جماعتیں پی ٹی آئی کے ساتھ کندھے سے کندھا ملا کر چلیں گی اور اس کےلئے ہم کسی سے اجازت لینا ضروری نہیں سمجھتے۔ پی ٹی آئی چنیوٹ کے وفد سے ملاقات کے دوران گفتگو میں عمران خان نے کہا کہ14 اگست درحقیقت آزادی خوشحالی اور نئے نظام کی تکمیل کا دن ہے جس کے حصول کےلئے ہمارے آباﺅ اجداد نے بے پناہ قربانیاں دیں مگر صد افسوس کے گزشتہ تریسٹھ برس سے اس ملک کے حکمران اور جرنیل قوم کو لوٹ رہے ہیں اور اس قوم کی تمناﺅں کا خون کیا جارہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ چودہ اگست 2014ءموجودہ حکمرانوں سے نفرت کے اظہار کا دن ہے لہٰذا پوری قوم کو چاہیے کہ وہ ظالم حکمرانوں کے خلاف گھروں سے نکلیں تاکہ آزادی مارچ کی حقیقت کھل کر سامنے آسکے انہوں نے کہا کہ آزادی اظہار رائے اور پرامن احتجاج کا ہمیں حق ہے اور یہ حق ہم ضرور اد اکریں گے انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کی جانب سے اسلام آباد ڈی چوک میں جو ”سیاسی لنڈا بازار “لگایا جارہا ہے اس سے کسی کو بھی کوئی فائدہ حاصل نہیں ہوگا بلکہ اسلام آباد میں سجائے جانے والے اس بازار سے حقیقت کھل کر قوم کے سامنے آجائے گی انہوں نے کہا کہ آپریشن ضرب عضب فوج کی ذاتی کاوش ہے مگر موجودہ حکمران اپنی جانب سے جھوٹی حمایت کرکے قوم کے سامنے ہیرو بننے کے چکر میں ہیں جبکہ پاکستانی فوج نے اپنے ملک کی سالمیت کےلئے آپریشن ضرب عضب لانچ کیا جس کی حکمرانوں کو خبر تک نہ تھی ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ خادم اعلیٰ پنجاب کی عوام کے ساتھ سستے رمضان بازاروں کا رنگین ڈرامہ کرکے اربوں روپے کھو ہ کھاتے کررہے ہیں ۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -