مختلف ممالک میں عرصہ دراز سے تعینات ٹریڈ افسران کو واپس بلانے کا فیصلہ

مختلف ممالک میں عرصہ دراز سے تعینات ٹریڈ افسران کو واپس بلانے کا فیصلہ

  

اسلام آباد(آن لائن)حکومت نے دنیا کے مختلف ممالک میں عرصہ دراز سے تعینات ٹریڈ افسران کو واپس بلانے اور مارچ2015ءتک دنیا بھر کے پاکستانی سفارتخانوںمیں درجنوں نئے ٹریڈ افسران کی تعیناتی کافیصلہ کر لیا ہے جس کیلئے سلیکشن کا عمل سال رواں کے اختتام تک مکمل کرنے کا منصوبہ تیار کرلیا گیا اور اس ضمن میں وزارت تجارت نے سمری منظوری کیلئے وزیر اعظم کو بھجوادی جس میں کامیابی کے نمبر 40سے بڑھاکر 50فیصد، انٹرویوز کے نمبر کم کرکے 40فیصد اور غیر متعلقہ گروپوں کو نکالنے کی بجائے اس کو تمام گروپوں کیلئے اوپن کرنے کی سفارش کی گئی ہے ۔ذرائع کے مطابق اپنے لوگوں کو نوازنے کیلئے پیپلز پارٹی کے گذشتہ دور حکومت میں ٹریڈ افسران کی تعیناتیوںکیلئے کامیابی کے نمبر 60سے کم کرکے 40فیصد کردیئے گئے جواب بڑھا کر 50فیصد اور انٹرویوز کے نمبر کم کرکے 40فیصد کرنے کی سفارش کی گئی ہے ۔ذرائع کے مطابق نئے ٹریڈ افسران کی تعیناتی کیلئے تجر بے کیلئے نمبر نہ رکھنے کی تجویز ہے اور موجودہ پالیسی کے تحت ٹریڈ افسران کی تعیناتی تجارت،پاکستان ایڈ منسٹریٹو سروس ،کسٹمز ،انکم ٹیکس ،سیکرٹریٹ اور اکاوئنٹس جیسے مخصوص گروپوں سے کی جاتی ہے جبکہ نئے ٹریڈ افسران کی تعیناتی کیلئے اسکو اوپن کردینے کی تجویز ہے ۔ دوسری جانب وزارت تجارت کے ایک سنیئر افسر نے ”آن لائن“کو بتایا کہ اس وقت بیرون ملک تعینات متعدد ٹریڈ افسران کو سال رواں تک ملک واپس بلانے کا منصوبہ ہے اور نئے ٹریڈ افسران کی تعیناتی خالصتا میرٹ اور شفافیت کی بنیاد پر کی جائیگی ۔انہوں نے بتایا کہ وزیر اعظم سے سمری کی منظوری کے بعد نئے ٹریڈ افسران کی سلیکشن کا عمل شروع کردیا جائیگااور کامیاب امیدواروں کو تین ماہ کی تربیت دینے کے بعد تعینات کردیا جائیگا

واپس بلانے کا فیصلہ

مزید :

صفحہ آخر -