اسرائیلی جارحیت کیخلاف انسانیت کے علمبردارممالککی خاموشی افسوسناک ہے، ڈاکٹر وسیم

اسرائیلی جارحیت کیخلاف انسانیت کے علمبردارممالککی خاموشی افسوسناک ہے، ...

  

لاہور(سٹاف رپورٹر)پارلیمانی لیڈر پنجاب اسمبلی وامیر جماعت اسلامی پنجاب ڈاکٹر سید وسیم اختر نے غزہ پر اسرائیل کے وحشیانہ حملوں میں سینکڑوں فلسطینیوں کی شہادت پر شدید غم و غصے کااظہار کرتے ہوئے کہاہے کہ پانچ روز سے جاری بمباری میں146افرادسے زائد نہتے فلسطینی مسلمانوں کا بہیمانہ قتل اورایک ہزار کے قریب افراد کو زخمی کردیاگیا ہے مگر امن اور انسانیت کے علمبردارممالک،این جی اوز اور یواین او خاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں۔بے گناہ فلسطینیوں کے حوالے سے اسرائیلی مظالم کے خلاف حکومت پاکستان کی جانب سے واضح موقف اختیار کرتے ہوئے مسلم دنیا کو بیدار کرناہوگا۔انہوں نے کہاکہ اسرائیل کی جارحیت سے غزہ میں مسجدوں اورگھروں سمیت سینکڑوں عمارتیں ملبے کا ڈھیر بن چکی ہیں۔گئی سلامتی کونسل بھی جنگ بندی کرانے میں بری طرح ناکام ہوچکیہے۔کفار امت مسلمہ کے خلاف متحد ہوچکے ہیں۔اور وہ کوئی موقع ہاتھ سے خالی نہیں جانے دیتے۔ڈاکٹر سید وسیم اختر نے کہاکہ اسرائیل بغیرکسی وجہ کے حملے کررہاہے اور عام شہریوں کو نشانہ بنارہاہے۔یہ گزشتہ5پانچ برسوں میں تیسری بڑی کاروائی ہے۔فلسطینی مسلمانوں میں خوف وہراس اور زندگی گزارنامشکل ہوچکاہے۔شہداء اور زخمی ہونے والوں میں بڑی تعداد خواتین اور بچوں کی ہے۔اسرائیلی فوج کی دہشتگردی کااندازہ اس بات سے بخوبی لگایا جاسکتاہے کہ انہوں نے معذوروں کے بحالی کے مراکز تک کوتباہ کردیاہے۔جماعت اسلامی کے رہنمانے عالمی دنیا سے مطالبہ کیا کہ وہ اسرائیلی وزیر اعظم کی جانب سے فلسطینی علاقوں پر اسرائیلی فضائی حملے بند کرنے سے انکار پر اپنابھرپور کردار اداکرے۔غزہ میں انسانی حقوق کااحترام کیاجاناچاہئے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -