سعودی عرب میں خواتین کے لئے ایک انوکھی سروس متعارف کروادی گئی

سعودی عرب میں خواتین کے لئے ایک انوکھی سروس متعارف کروادی گئی

  

جدہ (نیوز ڈیسک) سعودی عرب میں خواتین کے لئے ایک انوکھی سروس متعارف کروادی گئی ہے۔ مقامی اخبار کے مطابق انٹرنیٹ پر نامعلوم افراد کی جانب سے ایک سروس لانچ کی گئی ہے جس کے ذریعے خواتین اپنے ہونے والے شوہروں کی جاسوسی کرسکتی ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ ویب سائٹ پر خواتین سے ان کے ہونے والے شوہر کا قومی شناختی کارڈ نمبر اور دیگر معلومات مانگی جاتی ہیں اور پھر چند ہی گھنٹے میں درکار معلومات فراہم کردی جاتی ہیں۔ ویب سائٹ پر دعویٰ کیا گیا ہے کہ وہ شادی سے قبل خواتین کو اپنے شوہروں کو بہتر طور پر جاننے کا موقع فراہم کرتی ہے۔ تاہم یہ تمام معلومات مفت میں میسر نہیں بلکہ اس کام کے لئے کواتین کو بھاری معاوضہ ادا کرنا پڑتا ہے۔ دئیے گئے ”ریٹ کارڈ“ کے مطابق مقامی مسجد کے امام سے یہ پتا کرنے کی فیس کہ کیا متعلقہ شخص اکثر مسجد آتا ہے، 1500 سعودی ریال ہے۔ اسی طرح گاڑی چلانے کی عادات پتا لگانے کے 1000 ریال، عوامی مقامات پر طرز عمل معلوم کرنے کے 2000 ریال اور سگریٹ نوشی کی عادات کے بارے میں پتا لگانے کا معاوضہ 500 ریال ہے۔ مقامی میڈیا کے مطابق آج کل بھی بیشتر شادیاں خاندانی سطح پر طے پاتی ہیں، ان حالات میں عورتوں کے لئے یہ تازہ سہولت سعودی مردوں کے لئے آنے والے دنوں میں خاصی پریشان کن ثابت ہوسکتی ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -