تحفظ پاکستان ایکٹ اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا گیا

تحفظ پاکستان ایکٹ اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا گیا
تحفظ پاکستان ایکٹ اسلام آباد ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا گیا

  

 اسلام آباد (ما نیٹر نگ ڈیسک )آ زاد رکن قومی اسمبلی جمشید دستی نے تحفظ پاکستان ایکٹ 2014ءکو ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ایڈووکیٹ سعیدخورشید کے توسط سے دائر کی گئی پٹیشن میں جمشید دستی کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا ہے کہ تحفظ پاکستان ایکٹ 2014ءکے قانون سے گلو بٹ جیسے کرداروں کو لامحدود اختیار مل سکتے ہیں، ایکٹ میں ریمانڈ حاصل کرنے کا طریقہ درست نہیں ہے اور یہ قانون ذاتی پسند، ناپسند اور سیاسی مخالفین کیخلاف استعمال ہو سکتا ہے۔ ایکٹ بنیادی انسانی حقوق کے منافی آئین کی شق 4، 9 اور 10 کی خلاف ورزی ہے۔ واضح رہے کہ متحدہ قومی موومنٹ سمیت بعض سیاسی جماعتوں کی جانب سے تحفظات کے باوجود پارلیمنٹ کے دونوں ایوانواں نے تحفظ پاکستان ایکٹ 2014ءکی منظوری دیدی تھی۔ قومی اسمبلی اور سینیٹ کی منظوری کے بعد بل ایوان صدر بھجوایا گیا۔ صدر مملکت ممنون حسین کے دستخط کے بعد یہ بل تحفظ پاکستان ایکٹ بن گیا ہے جو ملک بھر میں فوری طور پر نافذ العمل ہوگا، ابتدائی طور پر یہ قانون دو سال کیلئے نافذ ہوگا۔

مزید :

اسلام آباد -Headlines -