ظالموں نے اس فلسطینی کا گھر کیسے تباہ کیا

ظالموں نے اس فلسطینی کا گھر کیسے تباہ کیا
ظالموں نے اس فلسطینی کا گھر کیسے تباہ کیا

  

یروشلم( نیوز ڈیسک ) فلسطینی علاقے غزہ پر اسرائیل مسلسل سات روز سے آگ بر سا رہا ہے اور اس علاقے میں اب کوئی ایسی جگہ نہیں بچی ہے جو میزائلوں اور بم حملوں میں محفوظ رہی ہو ۔ قادر نامی 55سا لہ فلسطینی جو کہ مقامی یونیورسٹی میں زبا نیات کے پرو فیسر ہیں ، نے بتایا کہ جب ان کے گھر کے قریب اسرائیلی میزائل حملہ ہوا تو انہوں نے ایک منٹ کے دوران سب اہل خانہ کو جگایا اور وہ سب گھر سے دور چلے گئے جس کے لمحوں بعد ہی ان کے گھر پر بھی میزائل آ گرا اور سب کچھ جل کر خاکستر ہوگیا ۔ پروفیسر قادر کا کہنا ہے کہ ان کی قیمتی کتابیں اور گھر کا سامان تباہ ہو گیا ہے ۔ جس وقت پرو فیسر قادر کے گھر پر حملہ ہوا عین اسی وقت ایک اور گھر بھی حملے کا نشانہ بنا جس میں پانچ افراد شہید اور سولہ زخمی ہوگئے ۔ غزہ کے لوگوں کا کہنا ہے کہ اسرائیلی فوج سو چے سمجھے منصوبے کے تحت فلسطینیوں کے گھروں کو تباہ کر رہی ہے ۔ پہلے وارننگ کے طور پر ہلکاوا ر کیا جاتا ہے تاکہ وہ گھروں کو چھوڑیں یا بعض دفعہ فوج خود انہیں گھروں کو خالی کر دینے کا کہتی ہے اور بعض دفعہ کسی وارننگ کے بغیر میزائل برسا دیئے جاتے ہیں جس سے معصوم بچے اور عورتیں بارود کی نظر ہو جاتی ہیں ۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -