چینی ہیکر ہمارے ’جہاز‘ چرا رہے ہیں، امریکہ کا واویلا

چینی ہیکر ہمارے ’جہاز‘ چرا رہے ہیں، امریکہ کا واویلا
چینی ہیکر ہمارے ’جہاز‘ چرا رہے ہیں، امریکہ کا واویلا

  

نیویارک (نیوز ڈیسک) امریکی ڈیپارٹمنٹ آف جسٹس نے ایک چینی بزنس مین پر بوئنگ اور لوک ہیڈ مارٹن سمیت طیارے بنانے والی کئی کمپنیوں کے کمپیوٹرز ہیک کرنے پر فرد جرم عائد کر دی۔ ملزم سو بن پر الزام ہے کہ اس نے نامعلوم ہیکرز کی مدد کرتے ہوئے انہیں ایف 22، ایف 35 اور سی 17طیاروں سمیت کمپنیوں کی دیگراہم معلومات فراہم کیں۔ سُو بِن چینی ایئرو سپیس کمپنی چلاتا ہے، جس کے دفاتر کینیڈا میں ہیں۔ ملزم کو کینیڈین پولیس نے ایف بی آئی کی مدد سے 28جون کو گرفتار کیا تھا۔ ڈیپارٹمنٹ آف جسٹس کا کہنا ہے کہ سو اور اس کے نامعلوم چینی ہیکرز دوستوں نے 2009ءسے 2013ءتک مواد چوری کیا۔ یہ ڈیٹا چین کے ایک مضافاتی علاقہ سے امریکی کمپیوٹر سسٹم کو ہیک کرکے حاصل کیا گیا۔ سو کے کمپیوٹر سے ملنے والی ایک ای میل کے مطابق وہ لکھتا ہے کہ یہ ڈیٹا چینی ایئرکرافٹ ڈیزائنرز کے لئے انتہائی مدد گار ثابت ہوگا اور انہیں امریکی معیار تک پہنچا دے گا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -