نواز شریف کی آمدپر تاجر استقبالیہ میں شرکت سے لا تعلق رہے

نواز شریف کی آمدپر تاجر استقبالیہ میں شرکت سے لا تعلق رہے

لاہور(اسد اقبال)صوبائی دارالحکومت کی بیشتر تاجر برادری میاں نواز شریف کی لاہور ائیر پورٹ پر آمد کے حوالے سے استقبالیہ میں شرکت سے لا تعلق رہی جبکہ مسلم لیگ ن ٹر یڈرز ونگ پنجاب اور لاہور کی قیادت نے بھی ریلی میں شرکت نہ کی ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ لاہور کی تاجر برادری مسلم لیگ ن کی قیادت سے نالاں ہو چکی ہے جس کے پیش نظر مسلم لیگی تاجروں نے بھی چپ سادھ رکھی ہے ۔ گزشتہ روز میاں نواز شریف کے استقبال کے لیے تاجروں نے نہ تو لاہور کی مارکیٹوں اور بازاروں میں خوش آمد ید اور اظہار یکجہتی کے بینرز آویزاں کیے اور نہ ہی استقبالیہ ریلی میں شرکت کی ۔ واضح رہے کہ مسلم لیگ ن کے دور حکومت میں تاجر برادری نے ہمیشہ بڑھ چڑھ کر پارٹی کی مدد کی جبکہ وزیر اعلی ہاؤس میں آئے روز کارنر میٹنگز کا بھی انعقاد ہوتا رہا ۔کسی بھی قدرتی آفت جس میں زلزلہ ، سیلاب یا کوئی اور آفت کی صورت میں کاروباری برادری نہ صرف مالی مدد کے لیے مال روڈ سمیت شہر کے مختلف حصوں میں کیمپ لگاتے بلکہ اشیائے خوردونوش سے بھرے ٹر ک بھی پارٹی بینرز سے سجاتے ہوئے متاثرہ جگہ پر بھجوائے جاتے تھے تاہم آج صورتحال اس سے مختلف ہو چکی ہے ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ تاجر برادری پر میاں برادران کے دور اقتدار میں خوف سے دوچار رہے اور ود ہولڈنگ ٹیکس سمیت درپیش مسائل حل کے لیے گزارشات کر نے بے باوجود کوئی ریلیف نہ دیا گیا جس کے پیش نظر تاجر برادری میں غم و غصہ کی لہر پائی جارہی ہے جس کا ثبوت آج یہ ملا کہ مسلم لیگ ن کے قائد اور سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف قانونی گرفت میں آنے کے بعد تاجر برادری نے بھی مسلم لیگ ن سے منہ موڑ لیا ہے اور کہا جا رہا ہے کہ لاہور کی تجارتی مارکیٹوں اور مراکز میں میاں برادران کا نام لینے والا اب کوئی نہیں رہا اور تاجروں کی زیادہ تر ہمدردیاں تحریک انصاف سے ہو چکی ہیں جس کے پیش نظر نہ تو میاں نواز شریف کی گرفتاری پر نہ تو کسی تاجر رہنماء نے احتجاج کیا ہے بلکہ مسلم لیگ ن ٹر یڈرز ونگ کی قیادت اور ممبران نے بھی چپ سادھ لی ہے ۔

تاجر لاتعلق

مزید : صفحہ اول