نوجوان لڑکی نے وکالت چھوڑ کر ایسا پیشہ اپنا لیا کہ جان کر آپ کو یقین نہیں آئے گا کوئی ایسا بھی کر سکتا ہے

نوجوان لڑکی نے وکالت چھوڑ کر ایسا پیشہ اپنا لیا کہ جان کر آپ کو یقین نہیں آئے ...
نوجوان لڑکی نے وکالت چھوڑ کر ایسا پیشہ اپنا لیا کہ جان کر آپ کو یقین نہیں آئے گا کوئی ایسا بھی کر سکتا ہے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک)کوئی مہنگے سکولوں سے تعلیم حاصل کرے، محنت کرتا ہوا ڈاکٹر، وکیل بنے اور پھر اپنی اس ڈگری کی پریکٹس چھوڑ کرکوئی اور پیشہ اختیار کر لے تو یقیناً ہر کسی کے لیے یہ حیرت کا سبب ہو گا۔ ایسی ہی ایک برطانوی لڑکی نے 9ہزار600پاؤنڈ (تقریباً ساڑھے 15لاکھ روپے) سالانہ فیس والے نرسری سکول سے لے کر آکسفورڈ یونیورسٹی سے وکالت کی تعلیم تک مہنگے اداروں سے علم حاصل کیا اور اب وکالت چھوڑ کر ایسا پیشہ اختیار کر لیا ہے کہ سن کر کسی کو یقین ہی نہ آئے۔

میل آن لائن کے مطابق 21سالہ گریس بیورلے نامی اس لڑکی پر سوشل میڈیا سٹار بننے کا بھوت سوار ہوا، جس کے لیے اس نے اپنی وکالت تج دی اوراپنا تمام وقت انسٹاگرام پر گزارنا شروع کر دیا ہے۔ اس نے GraceFitUKکے نام سے انسٹاگرام پر اکاؤنٹ بنا رکھا ہے جہاں اس کے 10لاکھ سے زائد فالوور ہو چکے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق گریس بیورلے اس انسٹاگرام اکاؤنٹ پر باقاعدگی سے اپنی تصاویر پوسٹ کرتی ہے، لوگوں کوورزش کے طریقے بتاتی ہے۔اب اس کا ذریعہ معاش بھی یہی انسٹاگرام اکاؤنٹ ہے جس کے ذریعے وہ اپنی فٹنس پراڈکٹس بھی فروخت کرتی ہے اور دوسرے برانڈز کی مصنوعات کی تشہیر کرکے بھی رقم کماتی ہے۔

اس کا کہنا ہے کہ ’’میرا رجحان شروع سے ہی فٹنس کی طرف تھا چنانچہ میں وکالت چھوڑ کر اس طرف آ گئی۔ یہاں مجھے کافی آمدنی بھی ہو رہی ہے اور سب سے بڑھ کر میں وہ کام کر رہی ہوں جو میں کرنا چاہتی تھی۔اب میں واپس مڑ کر نہیں دیکھنا چاہتی۔‘‘

مزید : ڈیلی بائیٹس