حسن نواز کو لاہوری لڑکے کا یہ خط موصول ، اس کے اندر کیا ہے ؟ دیکھ کر آپ کی ہنسی نہ رُکے گی

حسن نواز کو لاہوری لڑکے کا یہ خط موصول ، اس کے اندر کیا ہے ؟ دیکھ کر آپ کی ہنسی ...
حسن نواز کو لاہوری لڑکے کا یہ خط موصول ، اس کے اندر کیا ہے ؟ دیکھ کر آپ کی ہنسی نہ رُکے گی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(نیوز ڈیسک)سابق وزیر اعظم نواز شریف کے خلاف 6 جولائی کے روز قید کی سزا کا فیصلہ آنے کے بعد سے ان کے مخالفین بے رحمی سے اُن کا تعاقب جاری رکھے ہوئے ہیں۔صرف پاکستان میں ہی نہیں بلکہ لندن میں بھی اُن کے گھر کے سامنے ہر روز مظاہرے کیے جاتے ہیں۔ لاہور سے تعلق رکھنے والے ایک طالب علم کی بھی خواہش تھی کہ وہ لندن میں سابق وزیر اعظم کے گھر کی کھڑی کے سامنے کھڑا ہو کر چیخ سکے لیکن چونکہ اس کے لئے یہ ممکن نہیں تھا تو اُس نے شریف فیملی کے نام ایک خط لکھنے کا فیصلہ کیا۔

ویب سائٹ mangobazکے مطابق محمد خالد نامی اس طالب علم نے یہ خط ایک خاکی لفافے میں بند کیا اور اس پر سابق وزیر اعظم کا نام اور اُن کے ایون فیلڈ ، پارک لین ، لندن میں واقع گھر کا پتہ تحریر کر کے ریکارڈڈ پوسٹ کے ذریعے بھیجا تا کہ اسے خط کی وصولی کا ثبوت بھی مل سکے۔ اتفاق سے نوجوان کی جانب میں سے بھیجا گیا یہ خط سابق وزیر اعظم کے بیٹے حسن نواز نے خود وصول کیا، لیکن اس خط میں کیا تھا ؟

رپورٹ کے مطابق یہ خط نواز شریف کے خلاف سوشل میڈیا پر موجود طرح طرح کی مضحکہ خیز تصاویر اور تحریروں کا مجموعہ تھا۔ نوجوان کا کہنا ہے کہ اس نے یہ خط ریکارڈڈ پوسٹ کے ذریعے اسی لئے بھیجا تھا تا کہ اس کے پاس ثبوت موجود ہو کہ کس نے اسے وصول کیا اور وصولی کی رسید پر دستخط کیے۔

اس نوجوان کا کہنا ہے کہ حسن نواز کو یہ خط وصول کرنے کیلئے صبح ساڑھے آٹھ بجے اُٹھنا پڑاجس پر وہ بہت خوشی محسوس کر رہا ہے۔ اس نے دیگر سوشل میڈیا صارفین سے بھی کہا ہے کہ اگر وہ نواز شریف کے لندن میں واقع گھر پر اسی طرح کے خطوط بھیجنا چاہتے ہیں تو اس کے ساتھ ضرور رابطہ کریں۔ اس کا کہنا ہے کہ وہ اس مقصد کیلئے ریکارڈڈ ڈلیوری کا طریقہ استعمال کرے گا تا کہ ثبوت دستیاب ہو کہ خط کس نے وصول کیا ، کتنے بجے وصول کیا اور اس کے دستخط کے ساتھ وصولی کی رسید بھی آپ کو فراہم کی جائے گی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس