اس سعودی شخص نے بلدیہ کے مزدور کو سر عام تھپڑ دے مارا ، پھر اس کے ساتھ کیا سلوک کیا گیا؟ جان کر آپ بھی کہیں گے کہ انصاف ہو تو ایسا

اس سعودی شخص نے بلدیہ کے مزدور کو سر عام تھپڑ دے مارا ، پھر اس کے ساتھ کیا سلوک ...
اس سعودی شخص نے بلدیہ کے مزدور کو سر عام تھپڑ دے مارا ، پھر اس کے ساتھ کیا سلوک کیا گیا؟ جان کر آپ بھی کہیں گے کہ انصاف ہو تو ایسا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) قانون کے سامنے سب کو برابر ہونا چاہیے، ہم یہ بات سنتے تو بہت ہیں لیکن اس کی عملی مثال کم ہی دیکھنے کو ملتی ہے۔ سعودی عرب میں جب بلدیہ کے ایک مزدور کو سرعام ایک سعودی شہری کی جانب سے تھپڑ مارنے کی ویڈیو سامنے آئی تو اس واقعے کے نتیجے میں ایک بار پھر قانون کی مساوی عمل داری کی ایک اچھی مثال ہمارے سامنے آ گئی۔

خلیج ٹائمز کے مطابق یہ ویڈیو دارلحکومت کے شہدا پارک میں کسی نے اپنے موبائل فون سے بنائی تھی ۔ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ روایتی لباس میں ملبوس ایک سعودی شہری نے سہمے ہوئے مزدور کو پکڑ رکھا ہے۔ پھر وہ ایک زوردار تھپڑ بیچارے مزدور کے منہ پر مارتا ہے اور یوں بے فکری سے چل دیتا ہے گویا کچھ ہوا ہی نہیں۔

جب یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تو شہریوں نے اس سعودی شخص کو پکڑنے اور سخت سزا دینے کا مطالبہ شروع کر دیا۔ اب یہ خبر سامنے آئی ہے کہ پولیس نے اس بدقماش شخص کو گرفتار کر لیا ہے اور قانونی کاروائی کے لئے اسے پبلک پراسیکیوشن ڈیپارٹمنٹ کے حوالے بھی کر دیا گیا ہے۔ 

. شاب يصفع عامل نظافة بحديقة في السعودية.. وهكذا ردت أمانة الرياض استنكر سعوديون عبر موقع التواصل “تويتر” تصرف رجل ظهر في مقطع فيديو متداول يصفع عامل نظافة، مطالبين بمعاقبته. وأظهر المقطع المتداول رجلًا يصفع عامل نظافة في حديقة، ثم يسير عائدًا باتجاه سيارته، التي أوقفها على الرصيف. وشارك ناشطون عبر وسم #شاب_يصفع_عامل_نظافة، منتقدين تصرف الرجل. من جهتها، أكدت أمانة منطقة الرياض رفضها لهذا التصرف اللامسؤول واصفة بأنه تصرف “غير أخلاقي”. وقالت في تغريدة عبر “تويتر” أنه “إشارة إلى الفيديو المتداول والمتضمن الاعتداء على عامل النظافة بحديقة الشهداء في غرناطة بالرياض، تؤكد أمانة_منطقة_الرياض رفضها لهذا التصرف اللامسؤول والغير أخلاقي وستتابع الأمر مع الجهات الأمنية حفاظًا على حقوق العاملين في منشآتها”.

A post shared by الرمس نت (@alramsnet) on

سوشل میڈیا صارفین نے پولیس کی کارکردگی کو سراہا ہے اور ملزم کے خلاف فوری کاروائی کو انصاف کے تقاضوں کے عین مطابق قرار دیا ہے۔ زیادتی کا مرتکب شخص گرفتار تو ہو چکا ہے لیکن اسے سزا دینے کا مطالبہ تاحال برقرار ہے۔ پولیس کی جانب سے جاری کئے گئے ایک بیان کے بعد بھرپور توقع کی جا رہی ہے کہ جلد ہی گرفتار شخص کو قرار واقعی سزا بھی دے دی جائے گی۔ 

مزید : ڈیلی بائیٹس