جعلی مشروبات بنانے والی، 2فیکٹریاں سیل،بھاری مقدار میں خام مال برآمد

جعلی مشروبات بنانے والی، 2فیکٹریاں سیل،بھاری مقدار میں خام مال برآمد

لاہور(جنرل رپورٹر)وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر فوڈ اتھارٹی نے  جعلسازوں کیخلاف کریک ڈاؤن کے دوران مختلف علاقوں میں جعلی بوتلیں بنانے اور بیچنے والوں کا نیٹ ورک پکڑلیا،معروف انٹرنیشنل برانڈز کی جعلی کاربونیٹڈ ڈرنکس بنانے والی دوفیکٹریاں اکھاڑ دیں، ڈسٹری بیوٹر سیل35 ہزار لیٹر تیارجعلی بوتلیں،2 ہزار سے زائدخالی بوتلیں، 1200 لیڈز، بھاری مقدار میں خام مال اورجعلی لیبلز برآمد،15گیس سلنڈر، 6 فلنگ مشینیں، کیمیکلز،مصنوعی فلیورزاور دیگر مشینری ضبط کر لی گئی۔ ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی کیپٹن(ر) محمد عثمان کے مطابق سگیاں پل کے گردونواح میں دوفیکٹریوں جبکہ آمنہ پارک سے ڈسٹری بیوٹر کو سیل کیا گیا۔جعلی فیکٹریوں کے مالکان کے خلاف مقدمات درج کروا کے ایک ملزم کوموقع سے گرفتار کرلیا گیا۔انہوں نے بتایا کہ مصنوعی فلیورز، کیمیکلز، کھلے رنگوں اورگندے پانی سے مختلف برانڈز کی جعلی کاربونیٹڈڈرنکس تیار کی جا رہی تھیں۔مضر صحت اجزا ء سے تیارکردہ جعلی بوتلیں کینسر اور السر جیسی بیماریوں کا سبب بنتی ہیں۔آپریشن اور ویجیلنس ٹیموں نے رات کے اندھیرے میں فیکٹریوں کا سراغ لگا کر کارروائی کی۔ انہوں نے مزید بتایا کہ تیارکردہ جعلی بوتلیں لاہور کے مختلف علاقوں میں سپلائی کی جاتی تھیں۔چھوٹے دوکاندار جعلساز مافیا کے نرغے میں آنے کی بجائے مستند ڈیلرز سے اشیا ء خریدیں۔پنجاب فوڈ اتھارٹی خوراک کا ہر پہلو محفوظ بنانے تک اپنی کارروائیاں جاری رکھے ہوئے ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1