عوام اورتاجروں کے پیٹ پر پاؤں رکھ کر معیشت مستحکم نہیں کی جاسکتی، ثروت قادری

  عوام اورتاجروں کے پیٹ پر پاؤں رکھ کر معیشت مستحکم نہیں کی جاسکتی، ثروت ...

لاہور(نمائندہ خصوصی) سربراہ سنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری نے کہا ہے کہ ملک کی معیشت کو پرانے طریقے سے نہ سہی جدید طریقہ کار سے چلایا جائے،عوام،تاجروں،صنعتکاروں کے پیٹ پر پاؤں رکھ کر معیشت کو مستحکم نہیں کیا جاسکتا، جھوٹے وعدے اور دعوؤں سے جمہوری قدروں کو نقصان پہنچتا ہے،ملک کی معیشت کو کھوکھلا غریب عوام نے نہیں بلکہ اقتدار کے مزے لینے اور سرمایہ دارانہ نظام نے کیا ہے،معیشت کے عدم استحکام کی سزا غریبوں کو کیوں دی جارہی ہے،کسی کو بھی ٹیکس ادائیگی سے انکار نہیں ہے لیکن محصولات کی شرح منصفانہ اور حقیقت پسندانہ بنائی جائے،غریبوں کو ریلیف دینے کیلئے اب کیا حکومت کی بجائے آئی ایم ایف سے ڈیمانڈ کریں۔

، ثروت اعجاز قادری نے کہا کہ ریاست کو معاشی واقتصادی اور دفاعی طور پر مضبوط ومستحکم بنانا اولین ذمہ داری ہے،ملک کے پسے عوام تاجروں اور صنعتکاروں کو بھی ریلیف فراہم کرنا حکومت کا اخلاقی وجمہوری فرض ہے۔

، ملک کے عوام ملک کی دولت لوٹنے والوں کا سخت احتساب چاہتے ہیں مگر اس کو سیاسی اسکورنگ کیلئے استعمال نہ کیا جائے،ملک کے خزانے سے لوٹی گئی ایک پائی بھی حکومت وصول کرنے میں ناکام ہے،لٹیروں سے قومی دولت کا وصول نہ ہونا اور عوام کو ریلیف نہ ملنا تشویشناک عمل ہے، ملک کی دولت پر سیر سپاٹے اورعیاشی کرنیوالوں کے خلاف حکومت نے وائٹ پیپر شو کردیا، کس سیاسی لیڈر کی پاکستان اور بیرون ملک میں جائیداد اور منی لانڈرنگ دولت ہے حکومت عوام پر عیاں کرئے،قانون سب کیلئے برابر ہے کا دعوی کرنے سے کام نہیں چلے گا قانون کی گرفت میں جو بھی کرپٹ ہے وہ کسی بھی صف میں ہو لانا ہوگا،مہنگائی پر مہنگائی کے طوفان نے غریبوں کو خود کشی پر مجبور کیا ہوا ہے تو دوسری طرف ادویات کی قیمتوں میں اضافے سے غریب کو علاج ومعالجے سے بھی دور کیا جارہا ہے، 

مزید : میٹروپولیٹن 1