شہدا، 13جولائی 1339ء نے بتا دیا کشمیری حق و صداقت کا راستہ ترک نہیں کرینگے

شہدا، 13جولائی 1339ء نے بتا دیا کشمیری حق و صداقت کا راستہ ترک نہیں کرینگے

  

لاہور (لیڈی رپورٹر) یوم شہدائے کشمیر ہمیں 13 جولائی 1931ء کے اُن عظیم غیور کشمیر فرزندان اسلام کی یاد دلاتا ہے جنہوں نے نماز کیلئے دی جانیوالی اذان مکمل کرنے کی خاطر اپنی جانیں قربان کر دیں۔ کشمیری شہداء نے اپنے پاک خون سے حق و صداقت کا جو چراغ روشن کیا تھا، اسکی روشنی ہر کشمیری مسلمان کے قلب و روح کو منور اور بھارتی جبر و استبداد کے مقابلے کیلئے تیار کر رہی ہے۔ کشمیری بھارتی تسلط سے نجات اور حق خودارادیت چاہتے ہیں۔عالمی برادری خا موش تماشائی بننے کی بجائے اس مسئلہ کو حل کروانے میں اپنا کردار ادا کرے۔ ان خیالات کا اظہار مقررین نے ”یوم شہدائے کشمیر“ کے موقع پر نظریہئ پاکستان ٹرسٹ کے زیر اہتمام منعقدہ آن لائن دوروزہ ”شہدائے کشمیر کانفرنس“ کے پہلے روز افتتاحی سیشن کے دوران کیا۔ کانفرنس کی کارروائی نظریہئ پاکستان ٹرسٹ کے فیس بک پیج اور یو ٹیوب چینل پر دکھائی گئی۔ کانفرنس کاباقاعدہ آغاز تلاوتِ کلامِ پاک‘ نعت رسول مقبولؐ اور قومی ترانہ سے ہوا۔قاری خالد محمود نے تلاوتِ کلامِ پاک کی سعادت حاصل کی جبکہ حافظ مرغوب احمد ہمدانی نے بارگاہِ رسالت مآبؐ میں نذرانہئ عقیدت پیش کیا۔ آن لائن تقریب کی نظامت کے فرائض نظریہئ پاکستان ٹرسٹ کے سیکرٹری شاہد رشید نے انجام دیے۔تحریک پاکستان کے مخلص کارکن‘ سابق صدر اسلامی جمہوریہ پاکستان و چیئرمین نظریہئ پاکستان ٹرسٹ محمد رفیق تارڑ نے اپنے صدارتی خطاب میں کہا کہ مذہبی‘ جغرافیائی‘ تہذیبی و ثقافتی غرضیکہ ہر لحاظ سے کشمیر پاکستان کا حصہ ہے۔ قائداعظم ؒ نے کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ قرار دیا تھا۔کشمیر کے بغیر پاکستان نامکمل ہے۔ ہماری بقاء کیلئے ضروری ہے مقبوضہ کشمیر کو بھارت کے پنجہئ استبداد سے آزاد کروا کر اس کا پاکستان سے الحاق کیا جائے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ بھارت کے ظلم و جبر کیخلاف ہم آگے بڑھ کر اپنے مظلوم کشمیری بہن بھائیوں کا ساتھ دیں کیو نکہ وہ امید بھری نظروں سے اللہ تعالیٰ کے بعد صرف ہماری ہی طرف دیکھ رہے ہیں۔ اگر ہم نے آزمائش کی اس گھڑی میں ان کا ساتھ نہ دیا تو تاریخ ہمیں کبھی معاف نہ کرے گی۔ وزیراعظم آزاد جموں وکشمیر راجہ فاروق حیدر نے بطور مہمان خاص اپنے خطاب میں کہا میں نظریہئ پاکستان ٹرسٹ کا شکر گزار ہوں کہ وہ اپنے پلیٹ فارم سے کشمیریوں کی تاریخ ساز جدوجہدکو نمایاں کرتا رہتا ہے۔ میں نئی نسل سے کہوں گا وہ تحریک پاکستان کا مطالعہ کریں کہ یہ ملک کیوں بنا اور اس کیلئے اتنی قربانیاں کیوں دی گئی تھیں۔ لندن سے واپس آتے ہوئے قاہرہ میں مسلمانوں کی منعقدہ ایک تقریب میں قائداعظمؒنے اس بات کے جوا ب میں کہ متحدہ ہندوستان میں مسلمان ایک بڑی قوت کے طور پر موجود ہیں اور ہم وہاں حکومت کریں گے‘ کہا تھا کہ آپ لوگوں نے گورا سامراج دیکھا ہے دیسی سامراج نہیں دیکھا۔ آج بھارت میں بی جے پی کی حکومت مقبوضہ کشمیر اور بھارتی مسلمانوں سے جو ظلم وستم روا رکھے ہوئے ہے اس کو دیکھ کر اندازہ ہو جاتا ہے کہ قائداعظمؒ نے اس سمت درست نشاندہی کی تھی۔ جب تک پوری ریاست کا الحاق پاکستان سے نہیں ہو جاتا یہ سفر جاری رکھیں۔ آج بھی پاکستان کیخلاف سازشیں ہو رہی ہیں اسے نقصان پہنانے کی کوششیں جاری ہیں۔ سینیٹر ولید اقبال نے اپنے خطاب میں کہا کشمیر میں صدیوں سے مسلمانوں پر مظالم کا سلسلہ جاری ہے، لیکن مجھے یقین واثق ہے کشمیریوں کی تحریک آزادی ضرور رنگ لائے گی۔ سابق مشیر حکومت پنجاب محمد اکرم چودھری نے اپنے خطاب میں کہا ہم 13جولائی کے شہداء کو اسلئے یاد کرتے ہیں کہ ہمارے دل آج بھی ان کیلئے دھڑکتے ہیں۔ کشمیری شہداء کے خون کی حدت نے اس تحریک کو جلا بخشی ہے۔ہم خون کے آخری قطرے تک کشمیریوں کیساتھ ہیں۔ سینئر صحافی و دانشور سلمان غنی نے اپنے خطاب میں کہا کہ کشمیریوں کی تاریخ جدوجہد اور قربانیوں کی تاریخ ہے۔ کشمیر تاریخی، جغرافیائی، نسلی اور مذہبی اعتبار سے پاکستان کا حصہ ہے۔کشمیری آزادمنش لوگ ہیں اور وہ تحریک آزادی کو جاری رکھے ہوئے ہیں۔ پاکستان اس وقت نامکمل ہے جب تک کشمیر پاکستان کا حصہ نہیں بنتا،کشمیری بھارت سے نجات اور حق خودارادیت چاہتے ہیں۔عالمی برادری خاموش تماشائی بننے کی بجائے اس مسئلہ کو حل کروانے میں اپنا کردار ادا کرے۔ نمائندہ آل پارٹیز حریت کانفرنس انجینئر مشتاق محمود نے اپنے خطاب میں کہا ظالم جابر قابض حکمرانوں کیخلاف کشمیریوں کی جدوجہد آزادی جاری ہے۔ حریت کانفرنس تحریک آزادی سے کبھی پیچھے نہیں ہٹے گی۔ کشمیری پاکستانی جھنڈے میں دفن ہونا پسند کرتے ہیں۔ رہنما جماعت اسلامی آزادکشمیر خوشحال شاہین نے اپنے خطاب میں کہا آج پوری دنیا میں کشمیری یوم شہدائے کشمیر منا رہے ہیں۔ بھارت اس تحریک کو دبانے کیلئے جبروستم کا ہر ہتھکنڈا استعمال کر رہا ہے لیکن اسے ناکامی کا منہ دیکھنا پڑے گا اور کشمیری بہت جلد آزادی کی صبح دیکھیں گے۔ رہنما تحریک انصاف آزاد جموں وکشمیر فاروق خان آزاد نے اپنے خطاب میں کہا آج کشمیریوں میں بے چینی بڑھ رہی ہے اور انہوں نے آزادی کی تحریک میں مزید تیزی لائی ہے۔سیکرٹری نظریہئ پاکستان ٹرسٹ شاہد رشید نے اپنے خطاب میں کہا بھارتی فوج کے مظالم کے باوجود کشمیر کی فضائیں ”پاکستان زندہ باد“ اور ”کشمیر بنے گا پاکستان“ کے نعروں سے گونج رہی ہیں۔ ہمارا مطالبہ ہے بھارتی فوج مقبوضہ کشمیر سے نکل جائے اور ظلم وستم کا سلسلہ بند کرے۔

نظریہ پاکستان کانفرنس

مزید :

صفحہ آخر -