کراچی میں اسٹریٹ کرائمز کی وارداتوں میں اضافہ

  کراچی میں اسٹریٹ کرائمز کی وارداتوں میں اضافہ

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)کراچی میں اسٹریٹ کرائمز کی وارداتوں میں اضافہ ہوگیا ہے۔اعدادوشمار کے مطابق گزشتہ 6ماہ کے دوران 900 سے زائد اسٹریٹ کرمنلز کی رہائی ہوئی ہے۔پولیس حکام کے مطابق ملزمان رہائی کے بعد دوبارہ وارداتیں کرتے ہیں۔کراچی میں لاک ڈاؤن میں نرمی کے دوران اسٹریٹ کرائمز کی وارداتوں میں اضافہ ہوا۔ حالیہ بڑھتی وارداتوں کی بڑی وجہ ملزمان کی رہائی قراردی گئی ہے۔کراچی میں پولیس نے ضمانت پررہا ملزمان کی تفتیش کا باریک بینی سے جائزہ لینے کافیصلہ کیا ہے۔ اس سلسلے میں سنگین وارداتوں میں ملوث59ملزمان کے کیس دوبارہ چیلنج کیے جائیں گے۔ملزمان کی دوبارہ گرفتاری اورسزاکیلئے بھی کیمٹی قائم کی جارہی ہے۔738اسٹریٹ کرمنلزکی ضمانت منسوخی کیلئے ٹھوس شواہدجمع کرنے کافیصلہ کیا گیا ہے۔ چھ ماہ کے دوران 900 سے زائد اسٹریٹ کرمنلز رہا کیے گئے۔ پولیس حکام کے مطابق ملزمان رہائی کے بعد دوبارہ اسٹریٹ کرائمزکی وارداتیں کرتے ہیں۔سی پی ایل سی رپورٹ کے مطابق مئی میں 11 اور جون میں 20 گاڑیاں شہریوں سے چھین لی گئیں۔ جون میں 134 گاڑیاں اور2744 موٹرسائیکلز چوری ہوئیں۔ گزشتہ ماہ شہر میں 1877 موبائل فونز چھینے گئے جبکہ رواں ماہ کے صرف 10 دنوں میں 10 سے زائد گاڑیاں چوری ہوئی۔ رواں ماہ میں اب تک ایک ہزار سے زائد موٹرسائیکلیں چوری ہوچکی ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -