پاکستان سمیت دنیا بھر میں یوم شہدا ء کشمیر منا یا گیا، مقبوضہ وادی میں ہڑتال، کشمیریوں کی قربانیاں رائیگا ں نہیں جائیں گی: عارف علوی، جدوجہد آزاد ی کی حمایت جاری رکھیں گے: عمران خان

پاکستان سمیت دنیا بھر میں یوم شہدا ء کشمیر منا یا گیا، مقبوضہ وادی میں ...

  

سری نگر، مظفر آباد (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) مقبوضہ کشمیر، آزاد کشمیر اور پاکستان سمیت دنیا بھر میں مقیم کشمیریوں نے پیر کے روز یوم شہدائے کشمیر منایاکل جماعتی حریت کانفرنس کی اپیل پر مقبوضہ کشمیر میں مکمل ہڑتال رہی یہ دن 13 جولائی 1931کو ڈوگرہ فوج کے ہاتھوں سری نگر میں 22 بے قصور کشمیریوں کی شہادت کو اجاگر کرنے کے لیے منایا جاتاہے۔ 1931 میں ڈوگرہ فوج نے 22 کشمیریوں کو فائرنگ کرکے شہیدکیا تھا، یہ شہدا عبدالقدیرخان غازی کے خلاف مقدمے پر احتجاج کے لیے جمع ہوئے تھے اور ڈوگر فوج نے سری نگر جیل کے باہر موجودکشمیریوں پر اذان دینے پرفائرنگ کردی تھی۔اس موقع پر دنیا بھر میں مقیم کشمیریوں نے شہدا کو خراج تحسین پیش کرنے کیلئے ریلیاں نکالیں اور تقاریب منعقد کیں، جن میں مقررین نے کشمیریں پر بھارتی مظالم کے حوالے سے مودی سرکار پر شدید تنقید کی اور مطالبہ کیا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں کالے قوانین کا خاتمہ کرکے لاک ڈاؤن ختم کرئے اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق کشمیروں کو ان کا حق خود ارادیت دے۔دوسری طرف وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ محمد فاروق حیدر خان کی خصوصی ہدایت پرآزادکشمیربھر میں یوم شہدائے کشمیرمنایاگیا۔اس حوالہ سے مظفر آباد میں وزیر اعظم ہاؤس میں ایک خصوصی تقریب ہوئی جس مین وزیر اعظم آزاد کشمیر نے بھی شرکت کی بعد ازاں شہداء کو خراج عقیدت پیش کرنے اور بھارت مظالم پر احتجاج کیلئے احتجاجی ریلی کا بھی انعقاد کیا گیا ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہاکہ حکومت پاکستان اورپاکستانی عوام نے کشمیریوں کی سیاسی،سفارتی اوراخلاقی حمائت جاری رکھ کرکشمیریوں کی آزادی کی تحریک کومزیدجلابخشی ہے ایک مضبوط اورمستحکم پاکستان ہی کشمیریوں کی آزادی کاضامن ہے مقررین نے کہاکہ بھارت نے مقبوضہ کشمیرکے اندرعملاً جنگ شروع کررکھی ہے اورمسلسل کشمیریوں کی نسل کشی کررہاہے آئے روزبھارت نہتے اورمعصوم کشمیریوں پرظلم کے پہاڑتوڑرہاہے بچوں،بوڑھوں،جوانوں،خواتین کوشہیدکیاجارہاہے اس کے باوجودکشمیریوں کے جذبہ آزادی میں کمی نہیں آئی۔مقررین نے کہاکہ بھارت کروناوائرس کی آڑمیں نہتے اورمعصوم کشمیریوں پرظلم کے پہاڑتوڑرہاہے آئے روزبھارتی افواج کی طرف سے لائن آف کنٹرول اورمقبوضہ کشمیرکے نہتے اورمعصوم شہریوں پرظلم وستم کررہاہے مقررین نے کہاکہ بھارت جانتاہے کہ وہ کشمیریوں کے دلوں سے آزادی کاجذبہ اورپاکستان کی محبت کونہیں نکال سکتااسی لیے وہ طاقت کے زورپرمعصوم کشمیریوں کوشہیدکررہاہے لیکن بھارت یادرکھے کہ وہ جتنامرضی ظلم وستم کرلے کشمیری بزدل نہیں وہ بھارت سے ڈرنے والے نہیں آزادی کی خاطرکشمیری اپنے لہوکاآخری قطرہ تک بہادیں گے بھارت یادرکھے کہ اسے ہرکشمیری کے ایک ایک قطرے خون کاحساب دیناپڑے گاآزادی کشمیریوں کابنیادی حق ہے اوردنیاکی کوئی طاقت کشمیریوں کوآزادی کی نعمت سے محروم نہیں رکھ سکتی عالمی برادری بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیرکے اندرنہتے اورمعصوم کشمیریوں پرجدیدترین ہتھیاروں سے کئے جانے والے ظلم وستم کانوٹس لے اوربھارت پردباؤڈالے کہ وہ اپنی افواج مقبوضہ کشمیرسے نکالے اوربھارت پردباؤڈالے کہ وہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق کشمیریوں کوان کابنیادی حق آزادی دلوائے۔تقریب کے آخرمیں ملکی سلامتی،مقبوضہ کشمیرکی آزادی، شہداء جموں کشمیر اورکروناوائرس سے نجات کے لیے خصوصی دعابھی کی گئی۔دریں اثنامقبوضہ وادی میں بھارتی فوج کی فائرنگ نوجوان شہید اور ایک خاتون زخمی ہو گئی، علاقے میں غاصب فوج اور کشمیری نوجوانوں کے درمیان جھڑپیں رات گئے تک جاری رہیں۔ضلع اننت ناگ اسلام آباد کے علاقے سری گفوارا میں غاصب فوج کی فائرنگ سے ایک نوجوان شہید اور خاتون زخمی ہو گئی، زخمی ہونے والی خاتون کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔بھارتی فوج نے ایک مسجد کو گھیرے میں لے رکھا ہے جہاں کشمیری نوجوانوں اور بھارتی فوج کے درمیان لڑائی جاری رہی

یوم شہدائے کشمیر

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہاہے کہ کشمیر کے شہداء کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی، عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں بھارتی بربریت اور بنیادی انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں رکوانے کے لئے کردار ادا کرے۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہاکہ 13جولائی 1931 کو 22 کشمیر یوں نے جام شہادت نوش کیا۔صدر نے کہاکہ ڈوگرہ راج اور اب بھارت کے غاصبانہ قبضہ کے خلاف کشمیریوں کی جدوجہد کوسلام پیش کرتے ہیں۔ڈاکٹر عارف علوی نے کہاکہ شہداء کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی۔انہوں نے کہاکہ وہ دن دور نہیں جب کشمیر کی آزادی کا سورج طلوع ہو گا۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ بھارت سے آزادی تک کشمیریوں کی جائز جدوجہد کی حمایت جاری رکھیں گے، پاکستان کشمیریوں کے استصواب رائے کے حق کیلئے ثابت قدمی سے کھڑا ہے.وزیراعظم عمران خان نے یوم شہدائے کشمیر پر کشمیریوں کی نسل در نسل جدوجہدآزادی کو سلام پیش کرتے ہوئے اپنے پیغام میں کہا ہے کہ شہدائے13 جولائی کے لواحقین، اس کے بعد کی نسلیں آزادی کیلئے قربان ہوئیں، کشمیریوں نے بھارتی تسلط سے آزادی کیلئے نسل در نسل جانیں قربان کیں، یہ قربانیاں ہندتوا سوچ کے تحت کشمیریوں کی شناخت ختم کرنے کی بھارتی کوششوں کی ناکامی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ 13 جولائی 1931 کے شہداء کشمیری مزاحمتی تحریک کے بانی ہیں، بھارتی غیرقانونی قبضے اوربربریت کیخلاف کشمیریوں کی جدوجہد کامیاب ہو گی۔چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ مودی جو چاہے کر لے، کشمیریوں کی فتح نوشتہ دیوار ہے، مستقبل قریب میں بھارت کی شکست یقینی ہے۔ شہدا کی دی گئی اذان کی بازگشت سے بھارتی حکمران لرزتے رہیں گے۔قائد حزب اختلاف شہبازشریف نے شہدائے جموں وکشمیر کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارت غلط فہمی میں نہ رہے، مقبوضہ جموں وکشمیر مسلم اکثریتی خطہ ہے اور انشاء اللہ ہمیشہ رہے گا۔شہباز شریف نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ سری نگر سینٹرل جیل کے باہر جام شہادت نوش کرنے والوں کا نام تاریخ میں سنہری حروف سے درج ہے۔ 22 مسلمانوں کا جان قربان کرکے اذان مکمل کرنا واضح پیغام ہے کہ انہیں شکست نہیں دی جاسکتی نہ ہی جھکایا جاسکتا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ بھارت کے ظلم وجبر اور استبداد میں 5 اگست 2019 سے نئی شدت آئی ہے۔عالمی برادری، اقوام متحدہ اور سلامتی کونسل سے کشمیری سوال پوچھ رہے ہیں کہ انہیں انصاف کب ملے گا؟ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ حق خودارادیت کے عظیم مقصد کے حصول کیلئے کشمیریوں کی قربانیوں کا سفر آج تک جاری ہے، کوئی بھی جبر ان غیور کشمیریوں کے جذبہ جانثاری پر غالب نہیں آ سکتا۔ کشمیر کے 22 غیور نوجوانوں کے جذبے اور ہمت کو سلام پیش کرنا چاہتا ہوں جنہوں نے 13 جولائی 1931 کو ڈوگرہ سامراجی قوتوں کو للکارا اور جام شہادت نوش کی۔وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے اپنے پیغام میں کہا کہ دہائیوں سے جاری "حق خود ارادیت" کی جدوجہد کو پھر سے ترو تازہ کر دیا ہے۔ "حق خودارادیت" کے اس عظیم مقصد کے حصول کیلئے قربانیوں کا سفر آج تک جاری ہے، وزیرخارجہ کا کہنا تھا کہ کوئی بھی جبر ان غیور کشمیریوں کے جذبہ جانثاری پر غالب نہیں آ سکتا۔وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز نے کہاہے کہ یومِ شہداء کشمیر کی تاریخ کا ایک روشن باب ہے۔ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں وفاقی وزیر اطلاعات نے کہاکہ یہ مزاحمت ان عظیم سپوتوں کی یاد دلاتی ہے جو جبر و استبداد کے سامنے سینہ سپر ہوئے اور اپنی جانیں نچھاور کردیں۔ سینیٹر شبلی فراز نے کہاکہ آج وادی جنت نظیر ظلم و ستم کا جہنم بن چکی ہے۔ وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز نے کہاکہ فاشسٹ مودی کے ہاتھوں کشمیریوں کو بدترین بھارتی ریاستی بربریت کا سامنا ہے۔ سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر اور ڈپٹی اسپیکر قاسم خان سوری نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کا حل خطے کے امن اور استحکام کے لیے ناگزیر ہے،عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی طرف سے ڈھائے جانے والے مظالم کا نوٹس لے۔ پیر کو جاری مشترکہ بیان میں انہوں نے کہاکہ کشمیر میں بھارت کے ہاتھوں شہید ہونے والے مظلوم شہداء کا خون کبھی رائیگاں نہیں جاے گا۔اسد قیصر نے کہاکہ آزادی کی خاطر کشمیریوں نے لازوال قربانیاں دی ہیں، وہ دن دور نہیں جب کشمیری عوام آزادی کا سورج طلوع ہوتا ہوا دیکھیں گے۔سابق صدر آصف علی زرداری نے کہاہے کہ آزادی کشمیریوں کا بنیادی اور پیدائشی حق ہے، مقبوضہ کشمیر کی آزادی پیپلز پارٹی کا منشور ہے۔ ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ ناقص خارجہ پالیسی کی وجہہ سے کشمیریوں پر بھارتی مظالم بڑھے۔ انہوں نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر پر مودی کی جارحیت دہشت کردی تھی، پیپلز پارٹی کی حکومت ہوتی تو اپوزیشن کو ملا کر بھارت کے خلاف عالمی رائے عامہ بناتی، مقبوضہ کشمیر میں مودی کی دہشت گردی کے باوجود صدر اور وزیر آعظم اسلام آباد سے باہر نہیں نکلے۔

پاکستانی سیاسی قیادت

مزید :

صفحہ اول -