موبائل اراضی سینٹرز متعارف کرانے کا فیصلہ، منفرد اصلاحات کے ذریعے عوا م کو ان کا حق واپس کر رہے ہیں: عثمان بزدار

    موبائل اراضی سینٹرز متعارف کرانے کا فیصلہ، منفرد اصلاحات کے ذریعے عوا م ...

  

لاہور(جنرل رپورٹر) بزدار حکومت عوامی مسائل کے حل کیلئے جدید انداز میں موثر اقدامات کر رہی ہے۔ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی ہدایت پر اراضی ریکارڈ سے متعلقہ خدمات عوام کو ان کی دہلیز پر فراہم کرنے کیلئے صوبے میں موبائل اراضی سینٹرز متعارف کرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا ہے کہ موبائل اراضی سینٹرز شروع کرنے کیلئے تیاریاں مکمل کر لی گئی ہیں۔ اس اقدام سے دور دراز علاقوں کے لوگوں کو ان کے گھروں کے قریب زمین سے متعلقہ خدمات ملیں گی اور درخواست گزار کیلئے اب گھر بیٹھے فرد کا اجراء اور انتقال اراضی ممکن ہو سکے گا۔موبائل اراضی سینٹرز سے خصوصی طور پر بزرگوں، بیمار افراد اور خواتین کو سہولت ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب میں منفرد اصلاحات کے ذریعے عوام کو ان کا حق واپس کر رہے ہیں۔اراضی ریکارڈ سسٹم میں ریفارمز برسوں پرانے فرسودہ نظام کی باقیات کا حقیقی معنوں میں خاتمہ کریں گی۔ پہلے مرحلے میں 20 موبائل اراضی یونٹس خریدے گئے ہیں جن میں جدید آلات لگائے گئے ہیں اور موبائل اراضی یونٹس کو صوبے میں قائم دیگر اراضی سینٹرز سے جدید ٹیکنالوجی کے ذریعے منسلک کیا گیا ہے۔درخواست گزار 042111222277 پر کال کرکے سہولت سے فائدہ اٹھا سکیں گے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ ای گورننس کے اس اقدام سے پنجاب میں پٹوار کلچر کا حقیقی طور پر خاتمہ ہوگا۔ ماضی کی حکومتیں ذاتی مفاد کیلئے پٹوار کلچر کو فروغ دیتی رہیں۔محکمانہ اصلاحات سے کرپشن اور روایتی بوسیدہ نظام کو جڑ سے اکھاڑ پھینکیں گے۔انہوں نے کہا کہ سابق حکمرانوں نے ریفارمز کے نام پر کھوکھلے دعوے اور جھوٹے وعدوں سے عوام کو دھوکہ دیا۔ سردار عثمان بزدار سے سابق ائیر آفیسر کمانڈنگ سنٹرل ائیر کمانڈ،ائیروائس مارشل طارق ضیاء اورنئے تعینات ہونے والے ائیر آفیسر کمانڈنگ سنٹرل ائیر کمانڈ،ایئر وائس مارشل ظفر اسلم نے ملاقات کی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ایئر آفیسر کمانڈنگ سنٹرل ایئر کمانڈ کے عہدے پر احسن انداز میں خدمات سرانجام دینے پر ایئروائس مارشل طارق ضیاء کو خراج تحسین پیش کیا اور ان کیلئے نیک تمناؤں کا اظہار کیا۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے ائیر آفیسر کمانڈنگ سنٹرل ائیر کمانڈ کی ذمہ داریاں سنبھالنے پر ایئر وائس مارشل ظفر اسلم کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ ملاقات میں فضائی سرحدوں کی حفاظت کیلئے پاک فضائیہ کی پیشہ ورانہ مہارت اور خدمات کو سراہا گیا۔ دریں اثناء سردار عثمان بزدار سے بلوچستان کے وزیر صنعت حاجی محمد خان طور اتمن خیل کی قیادت میں وفد نے ملاقات کی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے دل ایک ساتھ دھڑکتے ہیں۔پنجاب کے ساتھ بلوچستان کی ترقی بھی عزیز ہے۔ دونوں صوبوں کے درمیان صنعت و تجارت کو فروغ دیا جائے گا۔ بلوچستان اور پنجاب کی سرحد پر انڈسٹریل زون بنانے کی تجویز کاجائزہ لے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت نے خیر سگالی کے طو رپر بلوچستان میں مختلف منصوبے شروع کئے ہیں۔ حکومت پنجاب گوادر میں پنجاب ہاؤس اور تفتان میں زائرین کے لئے سنٹر بنائے گی جبکہ خاران میں حکومت پنجاب کی طرف سے ٹیکنیکل کالج اسی سال مکمل ہوجائے گا۔ موسیٰ خیل میں بینک آف پنجاب کی برانچ، ریسکیو 1122سنٹر، کالج کیلئے ٹرانسپورٹ اور دیگر سہولتیں فراہم کررہے ہیں۔ بلوچستان میں دل کے امراض کا ہسپتال بھی قائم کیا جائے گا۔ تربت میں 100بیڈ کا ہسپتال حکومت پنجاب بنائے گی۔ڈیرہ غازی خان میں کارڈیالوجی انسٹی ٹیوٹ بننے سے بلوچستان کے لوگوں کو معیاری علاج کی سہولت ملے گی۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ اوکاڑہ میں میر چاکر اعظم رند کے تاریخی مقبرے کو اصل حالت میں بحال کیا جا رہا ہے۔ ڈیرہ غازی خان میں سٹیٹ آف دی آرٹ سبزی منڈی بنائیں گے،بلوچستان کے کاشتکاروں کو بھی سہولت ہوگی۔ ڈیرہ غازی خان میں سخی سرور روڈ پر سبزیوں اور پھلوں کو محفوظ کرنے کیلئے کولڈ سٹوریج اور ٹرک سٹینڈ بھی بنایا جائے گا۔بلوچستان سے تجارتی سرگرمیوں کو فروغ دینے کے لئے کوہ سلیمان میں روڈ انفراسٹرکچر کو بہتر بنارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ لاہو ر میں دبئی کی طرزپر نیا شہر بسا رہے ہیں۔ریور راوی سٹی میں ہیلتھ ایجوکیشن سٹی اور چھوٹے ڈیم بنائیں گے۔پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت بننے والے روڈز سے پنجاب ہی نہیں باہر سے آنے والے بھی مستفید ہوں گے۔

عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -