سمنگان میں افغان انٹیلی جنس کے صوبائی ہیڈ کوارٹر پر کاربم دھماکہ، فائرنگ، 10سکیورٹی اہلکار ہلاک 50سے زائد شدید زخمی

سمنگان میں افغان انٹیلی جنس کے صوبائی ہیڈ کوارٹر پر کاربم دھماکہ، فائرنگ، ...

  

کابل(این این آئی)افغانستان کے جنوبی صوبہ سمنگان میں افغان انٹیلی جنس کے صوبائی ہیڈکوارٹر پر کاربم دھماکے اورشدید فائرنگ کے نتیجے میں 10 سکیورٹی اہلکار ہلاک اور 50 سے زائدانٹیلی جنس اہلکار اور افغان شہری زخمی ہوگئے۔صوبائی گورنرکے ترجمان صدیق عزیزی کے حوالے سے ابتدائی معلومات کے مطابق صوبہ سمنگان کے صدر مقام ایبک شہر میں واقع نیشنل ڈائریکٹوریٹ آف سکیورٹی (این ڈی ایس) کی عمارت پرپیر کے روز صبح 11 بجے ایک خودکش بمبار نے کار بم دھماکہ کرایا جس کے بعدبیک وقت کئی حملہ آور شدید فائرنگ کرتے ہوئے عمارت میں داخل ہوگئے۔ اطلاعات کے مطابق دھماکہ انتہائی زوردارنوعیت کا تھا جس کی وجہ سے قریبی عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔دھماکے کے بعددورسے فضا میں دھواں اْڑتادکھائی دیا۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی افغان فورسز نے علاقہ کا گھیراؤ کرلیا اور حملہ آوروں کیخلا ف بھرپورکاروائی شروع کردی،اطلاعات کے مطابق حملہ آوروں اور فورسز کے مابین کئی گھنٹوں تک فاائرنگ جاری رہی۔ صوبائی تر جما ن عزیزی کے مطابق افغان فورسز نے چار حملہ آوروں کو سخت مزاحمت کے بعد موت کے گھاٹ اْتاردیا۔غیرملکی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق صوبہ سمنگان کے گورنرعبدالطیف ابراہیمی نے کاردھماکہ اور شدیددوطرفہ فائرنگ کے نتیجے میں 10 سکیورٹی اہلکار کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ 54دیگر افراد زخمی ہوگئے ہیں جن میں متعدد افغان شہری بھی شامل ہیں۔ محکمہ صحت کے صوبائی سربراہ عبدالخلیل مصدق کے مطابق بچوں اور خواتین سمیت درجنوں افراد کو ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے جن میں متعدد افراد کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے جس کی وجہ سے ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہرکیا جارہا ہے۔ ا دھرافغان میڈیانے طالبان کے ترجمان کے حوالے سے بتایاہے کہ طالبان نے واقعہ کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے70 اہلکاروں کے ہلاک اور زخمی ہونے کا دعویٰ کیا ہے۔

سمنگان حملہ

مزید :

صفحہ اول -