درآمدی اشیاء پر ریگو لیٹری ڈیوٹی کی شرح کم کی جائے، ایف ایم جی ایسوسی ایشن

درآمدی اشیاء پر ریگو لیٹری ڈیوٹی کی شرح کم کی جائے، ایف ایم جی ایسوسی ایشن

  

لاہور (سٹی رپورٹر) پاکستان ایف ایم سی جی ایسوسی ایشن (پی ایف آئی اے) نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اگر وہ حقیقی معنوں میں ملک میں معاشی اور تجارتی سرگرمیوں میں اضافہ دیکھنا چاہتی ہے تو سیلز ٹیکس کی شرح میں کمی کے ساتھ ساتھ درآمدی اشیاء پر ریگولیٹری ڈیوٹی کی شرح بھی کم کرے۔ اس کے علاوہ رجسٹرڈ یا غیر رجسٹرد تاجر حظرات کو اشیاء کی فروخت کے وقت قومی شناختی کارڈ کی شرط کو بھی ختم کیا جائے۔ پی ایف آئی اے کے چیئرمین انجم نثار اور نائب چیئرمین محمد اعجاز تنویر نے پیر کے روز اپنے ایک مشترکہ بیان میں کہا کہ ابھی تک حکومت نے جو بھی ریلیف پیکجز کا اعلان کیا ہے وہ معیشت یا تجارتی سرگرمیوں میں اضافہ کا باعث نہیں بن سکتے اور حکومت کو متوقع نتائج کے لئے نہ صرف سیلز ٹیکس اور ریگولیٹری ڈیوٹیز کی شرح میں کمی کرنی ہوگی بلکہ تاجروں کے حقیقی نمائندوں کے ساتھ مشاورت کرکے ایک ٹھوس پیکج کا اعلان کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو تمام زمینی حقائق کو سامنے رکھتے ہوئے فیصلہ کرنے چاہیے۔

مزید :

کامرس -