انسانیت کو نعرہ اور پہچان بنانے کی ضرورت ہے: وی سی منصو ر اکبر کنڈی

  انسانیت کو نعرہ اور پہچان بنانے کی ضرورت ہے: وی سی منصو ر اکبر کنڈی

  

ملتان (سٹاف رپورٹر)وائس چانسلر بہا ء الدین زکریا یو نیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر منصور اکبر کنڈی نے شعبہ علوم اسلامیہ بہا ء الدین زکریا یونیورسٹی ملتان کے زیر اہتمام آن (بقیہ نمبر29صفحہ6پر)

لائن سیمینار ”قومی یکجہتی اور معاشرتی ہم آہنگی میں سائبان پاکستان بیا نیہ کا کردار“ سے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ انسانیت کو نعرہ اور پہچان بنانے کی ضرورت ہے۔پاکستان کی تعلیمی ترقی میں مشن سکولز کے کردار کو سراہتے ہوئے وائس چانسلر نے کہاکہ ان سکولوں کی طرز پر مذہب کی تفریق سے بالاتر ہوکر امیر غریب کو یکساں تعلیم کا موقع دیناچاہیے۔مدارس کے نظام تعلیم کو بہتر قرار دیتے ہوئے ان کے مثبت پہلوؤں کو اجاگر کرنا چاہیے۔سیمینار کے میزبان پروفیسر ڈاکٹر عبدالقدوس صہیب نے کہا کہ ہمیں پاکستانی قوم ہونے کی حیثیت سے یکجہتی کا مظاہر کرنا چاہیے اور اس طرح پاکستان کے روشن تشخص کو دنیا کے سامنے لانا ہماری ذمہ داری ہے۔اس اہم کام میں تمام مذاہب کے لوگوں کاکردار بنیادی حیثیت کا حامل ہے اور خاص طور مسلمانوں کا،اس لیے مسلما ن اس خطے میں زیادہ تعدادکے حساب سے آباد ہیں تو ان کا دیگر مذاہب کے لوگوں سے عمدہ رویہ ایک مثالی نوعیت کا حامل ہو‘جیساکہ اس کی تعلیم ہمیں سنت نبوی ؐاور تعلیمات اسلامیہ سے بجاطور پر ملتی ہے۔ ڈائر یکٹر جنر ل ادارہ تحقیقات اسلامی، اسلام آباد پروفیسر ڈاکٹر محمد ضیا ء الحق نے سائبان پاکستان کے آغاز و ارتقاء اور اغراض و مقاصد پر گفتگو کرتے ہوئے اس کے پانچ یونٹس اور بائیس نکات کا خلاصہ شرکاء کے سامنے رکھا اور اس باررے اہل علم و دانش کو دعوتِ فکر دی۔انہوں مزید کہا کہ ہمیں دیگر سنتوں کی طرح غیر مسلوں کے ساتھ حسنِ سلوک کی سنت پر بھی عمل پیرا ہونے کی ضرورت ہے۔ڈاکٹرعصمت ناز، ڈین سوشل سائنسز دی ویمن یو نیورسٹی ملتان نے سائبان پاکستان بیانیہ کے سلسلے میں خواتین کے کردار پر گفتگو کی،اس بات پر زور دیا کہ خواتین اپنی اولاد کو مذاہب کے احترام کوسبق اپنی آغوش سے دیں تاکہ عملی زندگی کے اندر یہ اس کا اظہار کر پائیں کیونکہ آغوشِ مادر کے اسباق کو بہت اہمیت حاصل ہے اور یہ انسان کو زندگی بھر یاد رہتے ہیں۔ممبر پنجاب اسمبلی،رامیش سنگھ اروڑا نے کہا کہ قیام پاکستان کے وقت ہمارے اجداد نے اس دھرتی کے ساتھ محبت کا ثبوت دیتے ہوئے اسے ترک نہیں کیا۔پاکستان میں ریاستی طور پر اقلیتوں کے حقوق مکمل طور پر محفوظ ہیں۔اس سلسلہ میں کسی فرد یا جماعت کو کردار نہیں بلکہ یہ آئین پاکستان کا دیا ہوا انعام ہے جسے عوامِ پاکستان کے تعاون سے نافذ کیا گیا ہے۔ہم ریاست پاکستان اور اس سے بڑھ کر عوامِ پاکستان کے مشکور ہیں۔پاکستان میں اقلیتوں کے حقوق کا خیال ان کی امنگوں کے مطابق رکھا جارہا ہے۔فادر ڈاکٹرجمشید البرٹ،ڈائریکٹرپاسٹل انسٹی ٹیوٹ ملتان،نے تحریک پاکستان میں عیسائی برادری کے کردار کو نمایاں کیا۔

وی سی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -