ملتان،قائم خان کرمانی کی یاد میں تعزیتی ریفرنس

ملتان،قائم خان کرمانی کی یاد میں تعزیتی ریفرنس

  

ملتان (سٹی رپورٹر)سینئر سیاست دان و سابق ممبر قومی اسمبلی مخدوم جاوید ہاشمی نے کہاہے کہ قائم خان کرمانی جنوبی پنجاب کے عبد الستار ایدھی تھے جنہوں نے ساری زندگی نابینا افراد کی تعلیم و تربیت اور ان کی فلاح کے لئے کام کیا نابینا افراد کو بھیک مانگنے سے ببچانا ان کا مشن تھا جس کی تکمیل کے لئے انہوں نے دن رات محنت کی قائم خان نے خود نابینا ہونے کے(بقیہ نمبر30صفحہ6پر)

با وجود پاکستان سمیت دنیا ببھر کا سفر کیا اور ترقی یافتہ ممالک میں نابیناا فراد کے لئے استعمال ہونے والے جدید حالات پاکستان منگوائے جس سے ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے نابینا افراد مستفید ہوئے قائم خان کرمانی کی اچانک وفات سے نابینا افراد اپنے محسن اور روحانی باپ جبکہ اہل ملتان ایک درد دل رکھنے والے انسان سے محروم ہو گئے ہیں ان خیالات کااظہار انہوں نے گذشتہ روز سماجی تنظیم سوشل ترقیاتی گروپ اور وسیب ڈویلپمنٹ فورم کے زیر اہتمام ممتاز سماجی رہنما ملک محمد یوسف کی رہاہش گاہ پر منعقدہ قائم خان کرمانی کی یاد میں منعقدہ تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر سینئر صحافیوں، شوکت اشفاق، اسد ممتاز، ظہور دھریجہ، حاجی مظہر جاوید سیال سمیت ممبر صوبائی اسمبلی سلیم لابر، تحریک انصاف کے رہنما رانا عبد الجبار، مخدوم زوہیب گیلانی، سعدیہ کرمانی، پروفیسر عنایت علی قریشی، حافظ محمد ظفر قریشی،رانا اسلم ساگر، اظہر بلوچ، نصرت بانو،ملک ریاض خلجی، ملک عمران یوسف،حافظ عبد الرحمن، سلیم درباری، بابر وارثی، ملک محمد عمر کمبوہ، سجاد ملک، مشرف علی قریشی، شاکر علی انجم، عمران صدیقی، شیخ عبد الحمید قادری، نواز بھٹی،ملک غلام غونث، ملک سرفراز غوری، شیخ صلاح الدین، عابدہ بخاری، سید مطلوب بخاری، حافظ معین خالد، ملک محمد اکمل،ملک سلیم، اکرم شہزاد، محمد علی رضوی، زبیر دھریجہ، ملک عتیق،الطاف گیلانی، عیسی بھٹہ، سمیت دیگر نے شرکت اور خطاب کیا اس موقع پر مخدوم جاید ہاشمی نے کہاہے کہ محمد بن قاسم بلائنڈ ویلفیئر کیمپلیکس کے بانی قائم خان کرمانی بصارت سے محروم تھے لیکن اللہ تعالی نے ان کے اندر بصیرت کوٹ کوٹ کر بھری ہوئی تھی میں نابینا سنٹر میں اس وقت بھی گیا جب طالب علم تھا بعد ازاں مختلف ادوار میں بطور وزیر بھی کئی بار اس ادارے میں جانے اور وہاں پر زیر تعلیم نابینا افراد سے ملنے کا بھی اتفاق ہوا انہوں نے کہاہے چوک کمہاراں والا پر نابینا سنٹر کا وجود پہلے جبکہ چوک کمہاراں والے کا نام بعد میں مشہور ہوا محمد قائم خان کرمانی اور ان کا نابینا سنٹر پاکستان بھر میں ملتان کی شناخت ہے اور اس ادارے سے فار غ التحصیل نابینا افراد آج ملک بھر میں سرکاری و غیر سرکاری اداروں میں کام کرکے باعزت روزگار کمانے میں مصروف ہیں اس موقع پر گفتگوکرتے ہوئے معروف سماجی رہنما ملک محمد یوسف نے کہاہے کہ قائم خان کرمانی محسن ملتان ہیں جنہوں نے ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے سینکڑو ں نابینا افراد کی زندگیوں کو روشن کیا آج ملتان شہر کے تمام سیاسی، سماجی، مذہبی رہنما اپنے محسن قائم خان کرمانی کو یاد کرکے ان کو خراج عقیدت پیش کر رہے ہیں ممبر صوبائی اسمبلی سلیم لابر نے کہاہے کہ قائم خان کرمانی نے ساری زندگی نابینا افراد کی خدمت کرنے میں وقت کی اس طرح کا وژن رکھنے والے افراد روز روز پیدا نہیں ہوتے سینئر صحافی شوکت اشفاق نے کہاہے کہ قائم خان کرمانی ایک مشن کا نام تھا آج کرمانی صاحب ہم نہیں رہے لیکن ہم سب نے ملک کر اس مشن کی تکمیل کے لئے ان کی صاحبزادی کے ہاتھ مضبوط کرنے ہیں سینئر صحافی اسد ممتا زنے کہاہے کہ قائم خان کرمانی کی محنت کی بدولت آج کا نابینا تنہا اور بے روزگار نہیں ہے بلکہ وہ ہنر کی دولت سے مالا مال ہے جس کی بدولت وہ باعزت روزگارحاصل کر سکتا ہے سینئر صحافی ظہور احمد دھریجہ نے کہاہے کہ قائم خان کرمانی نے سرائیکی وسیب کے نابینا افراد کی زندگیوں کو روش کیا جس پر پورا سرائیکی وسیب ان کو خراج عقیدت پیش کرتا ہے سینئر صحافی حاجی مظہر جاوید سیال نے کہاہے کہ قائم خان کرمانی کی زندگی سماجی سیکٹر سے وابسطہ افراد کے لئے کھلی کتاب ہے قائم خان کرمانی کے مشن کی تکمیل کے لئے سعدیہ کرمانی کے ساتھ ہیں قائم خان کرمانی صاحبزادہ سعدیہ کرمانی نے کہاہے کہ محمد بن قاسم بلائنڈ سنٹر کے ساتھ اہل ملتان نے کل بھی تعاون کیا اور مجھے امید ہے کہ میرے والد کے جانے بعد وہ مجھے تنہا نہیں چھوڑیں گے انہوں نے کہاہے کہ اپنے والد کے مشن کی تکمیل کے لئے میں دن رات محنت کروں گی خواں اس کے لئے کتنی ہی قربانی کیوں نہ دینے پڑے انہوں نے تعزیتی ریفرنس منعقد کرانے اور اس میں شرکت کرنے پر تما م سیاسی، سماجی اورمذہبی رہنماؤں کا شکریہ ادا کرتی ہوں انہوں نے کہاہے کہ بلائنڈ سنٹرکے دروازے آپ تمام افراد کے لئے ہر وقت کھلے ہوئے ہیں معروف سماجی رہنما اظہر بلوچ نے کہاہے کہ قائم خان کرمانی ایک سوچ اور فکر کانام ہے اس طرح کی مثبت سوچیں کبھی ختم نہیں ہوتی بلکہ ہمیشہ زندہ رہتی ہیں ملک فاؤنڈیشن کے جنرل سیکریٹری ملک ریاض خلجی نے کہاہے کہ قائم خان کرمانی نے نابینا افرا د کی فلاح و بہبود کے لئے جو کام کیا ہے یہ صدقہ جاریہ ہے ملک عمران یوسف نے کہاہے کہ قائم خان کرمانی ہمارے شہر کے فخر تھے انہوں نے ہمیشہ مستحق افراد کے لئے اپنے دروازے کھلے رکھے۔

ریفرنس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -