کورونا وائرس کے دوران پاکستان میں ڈیجیٹل ٹرانسفر بڑھا، آئی ایم ایف

کورونا وائرس کے دوران پاکستان میں ڈیجیٹل ٹرانسفر بڑھا، آئی ایم ایف

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) نے اپنی نئی آؤٹ لک رپورٹ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا کے دوران پاکستان میں ڈیجیٹل ٹرانسفر بڑھا، شرح سود کو کم کیا گیا جبکہ رواں مالی سال شرح نمو ایک فی صد رہے گی۔آئی ایم ایف کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کو تاحال کورونا کے نقصانات کا سامنا ہے۔ کورونا کے دوران اسلام آباد کو فنڈز فراہم کیے۔ کورونا کی وجہ سے فنڈز کی ترجیحات تبدیل ہوئیں۔رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ وباء کورونا کی وجہ سے پاکستان میں محاصل متاثر ہوئے، کورونا کی وجہ بروقت ٹیکس جمع کرنا دشوار ہوا، عالمی بیماری کی وجہ سے پاکستان کو مانیٹری پالیسیوں میں تبدیلیاں کرنا پڑیں۔آئی ایم ایف کے مطابق لاک ڈاؤن کی وجہ سے متاثر افراد کو کیش گرانٹس دینا پڑیں، چھوٹے کاروبار کو بحال کرنے کیلیے رعایتیں دینا پڑیں، کورونا کے دوران پاکستان میں ڈیجیٹل ٹرانسفر بڑھا۔نئی آؤٹ لک رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ پاکستان نے کیش گرانٹس بھی ڈیجیٹل ٹرانسفر کیں، کورونا کی وجہ سے پاکستان نے شرح سود کم کیا، شرح نمو متاثر ہوئی، رواں مالی سال پاکستان کی شرح نمو ایک فی صد رہے گی۔

آئی ایم ایف

مزید :

صفحہ اول -