مٹہ،تحریک مظلومان ملاکنڈ ڈویژن کا احتجاجی دھرنا شروع

مٹہ،تحریک مظلومان ملاکنڈ ڈویژن کا احتجاجی دھرنا شروع

  

مٹہ (نمائندہ پاکستان) ڈیڈ لائن ختم تحریک مظلومان ملاکنڈ ڈویژن نے مٹہ بریم پل کی قریب دھرنا شروع کردیا صوبائی حکومت اور دیگر ذمہ دار تحریک مظلومان ملاکنڈ ڈویژن کے متاثرین کیلئے صوبائی اسمبلی سے منظور ہونے والی متفقہ قرار داد پر عمل کرنے کیلئے عملی اقدامات اٹھائیں جب تک متاثرہ لوگوں کے جائز مطالبات پوری نہیں ہوتے احتجاجی دھرنا جاری رہے گامقررین کا شرکاء سے خطاب پولیس اور انتظامیہ کے افسران موقع پر پہنچ گئے سیاسی جماعتوں کے مقامی قائدین نے بھی دھرنے میں شرکت کرکے تحر یک مظلومان کیساتھ بھرپور حمایت کا اعلان کیا تفصیلات کی مطابق حکومت اور دیگر ذمہ داروں کو تحریک مظلومان ملاکنڈ ڈویژن کے طرف سے دیئے گئے ڈیڈ لائن کو ختم ہونے کی بعد تحریک کے سینکڑوں افراد نے مٹہ بریم پل کی قریب گراونڈ میں احتجاجی دھرنا شروع کیا ہے جو اخری اطلاعات تک جاری تھا ادھر دھرنے کی شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے صدر رحیم شاہ اور جنرل سیکرٹری خان زمان اور دیگر مقررین نے کہا کہ صوبائی حکومت اور محکمہ فارسٹ سمیت دیگر ذمہ دار محکمے ا انکے ذمہ دار افسران ان متاثرین کی ساتھ انصاف کرکے ان لوگوں کی زرعی زمینیں جو جان بوجھ کر شامیلات میں شامل کرکے محکمہ جنگلات کی ملکیت قرار دی گئی ہے ان غریبوں کو حوالہ کرکے ان غریبوں کی ملکیت میں دی جائے جو ان غریبوں کی ائینی اور قانونی حق ہے انہوں نے کہا کہ کسی بھی غریب کا زرعی زمین محکمہ فارسٹ کی ملکیت میں ڈالنا کہا ں کا انصاف ہے مقررین نے کہا کہ صوبائی حکومت اور محکمہ فارسٹ سمیت دیگر ذمہ دار افسران اور ادارے فوری طور پر 2017میں صوبائی اسمبلی سے متفقہ طور پر منظور ہونے والے قرارداد پر عمل کرنے کیلئے عملی اقدامات اٹھائیں اور ان غریبوں کو مزید احتجاج کرنے پر مجبور نہ کریں انہوں نے کہا کہ ایک اطرف تو ان غریبوں کی زرعی زمینیں جان بوجھ کر اور ایک سازش کی طور پر محکمہ فارسٹ کی ملکیت میں ڈالی گئی ہے تو دوسرے طرف محکمہ جنگلات والے مختلف بہانوں اور ان غریبوں کو تنگ کرنے کیلئے ائے روز پرچے کرکے بھاری جرمانے اوصول کرتے ہے جس نے ان غریبوں کا جینا حرام کردیاہے انہوں نے خبر دار کرتے ہوئے کہا کہ یہ غریب عوام اپنی جائز اور سرکاری حق لیکر رہینگے اور اس کیلئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے اور کسی بھی احتجاج سے بھی دریغ نہیں کرینگے دریں اثناء اطلاع ملتی ہی ایس پی اپر سوات فرمان اللہ ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر مٹہ محمد یار خان ڈی ایس پی مٹہ سرکل پیرزر بادشاہ اور دیگر ذمہ داروں نے دھرنے کی مقام پر جاکر دھرنے کے ذمہ داروں سے بات چیت کی لیکن دھرنے شرکاء نے دھرنے کو ختم کرنے سے انکار کیا جبکہ مختلف سیاسی جماعتوں کے مقامی قائدین جن میں پی پی پی کے سید اکبر خان جے یوائی کے مٹہ تحصیل کے امیر قاری رحیم اللہ جنرل سیکرٹری نصر اللہ خان بابر اوردیگر بھی دھرنے کی مقام پر جاکر دھرنا دینے والوں کیساتھ بھر پور اظہار یکجہتی کا اعلان کیا اور دھرنے میں شرکت کی

مزید :

پشاورصفحہ آخر -