مہمند،خاصہ دار وں کا تنخواہوں کی بندش کیخلاف دھرنا بدستور جاری

  مہمند،خاصہ دار وں کا تنخواہوں کی بندش کیخلاف دھرنا بدستور جاری

  

مہمند(نمائندہ پاکستان)خاصہ داروں تنخواہوں کی بندش کے خلاف احتجاج بدستو رجاری پشاور ٹو باجوڑ شاہراہ چار گھنٹے تک بند، مسافروں سمیت مریضوں اورخواتین کو شدید گرمی میں مشکلات کا سامنا۔پانچ رکنی کمیٹی وزیراعلی خیبر پختو نخواہ سے ملاقات کے لئے تشکیل۔ وزیر اعلیٰ کو قبائلی عوام کے مطالبات اورتحفظات کے صورتحال سے اگاہ کرینگے۔تمام فیصلے قبائلی رسم و رواج کے تحت کر کے مشران کے ساتھ بھر پور تعاون جاری رکھیں گے۔ڈی پی او مہمند طارق حبیب، تفصیلات کے مطابق بروز پیر احتجاجی دھرنا جاری رہا۔جس میں حلیمزئی، خویزئی، بیزئی،ترگزئی،صافی اور اتمان خیل اقوام کے علاوہ مہمند سیاسی اتحاد نے بھی شرکت کی۔مظاہرین نے چار گھنٹے کے لئے پشاور باجوڑ شاہراہ کوہر قسم آمدورفت کیلئے بند رکھا۔جس کی وجہ سے مسافروں،مریضوں،بچوں اور خواتین کو شدید مشکلات کا سامناکرنا پڑا۔مظاہرین نے دو بجے روڈ کھولنے کا اعلان کیا۔جبکہ بعد میں ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر طارق حبیب نے احتجاجی دھرنے میں شرکت کر کے مشران کے ساتھ طویل مذاکرات کی۔اس موقع پر انہوں نے کہا۔کہ ہم مشران کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ اور تمام تنازعات خواہ وہ خاصہ دار ہو یا کوئی اور مسئلہ ہو۔ تومشران کے جرگہ کے ذریعے حل کرینگے۔ہم نے اپنے حکام بالاکو اپ لوگوں کے تحفظات سے آگاہ کیا ہیں۔حکمران جماعت پی ٹی آئی کے مقامی رہنماء سجاد مومندنے مشران کا ایک جرگہ کیلئے وزیراعلی خیبر پختونخواہ سے رابطہ کیا تھا۔جو کہ ٓاج دو بجے تک متوقع ہیں۔پانچ رُکنی جرگہ وزیراعلیٰ سے ملاقات کر کے ان کو قبائلی عوام کے مطالبات اور تحفظات سے آگاہ کرینگے۔جبکہ باقی مشران اور عوام کا دھرنا بدستور علنئی میں جاری رہے گا۔جبکہ مہمند سیاسی اتحاد نے بھی مشران کے بھر پور ساتھ دینے کا اعلان

مزید :

پشاورصفحہ آخر -