جامعہ زرعی یونیورسٹی کے کلاس فورس اور تھری ملازمین کا احتجاجی دھرنا جاری

  جامعہ زرعی یونیورسٹی کے کلاس فورس اور تھری ملازمین کا احتجاجی دھرنا جاری

  

پشاور (سٹی رپورٹر)جامعہ زرعی پشاور کے کلاس فور اور کلاس تھری ملازمین کا دھرنا پچھلے چھ دنوں سے وائس چانسلر سیکرٹریٹ کے سامنے جاری ہے جبکہ جامعہ کی انتظامیہ کی جانب سے تا حال ملازمین کیساتھ کوئی رابطہ نہیں کیا جا سکا جبکہ چھ دنوں سے جاری دھرنا کے حوالے سے وائس چانسلر کو ملازمین کے چارٹر آف ڈیمانڈ تک نہیں پتہ جس پر ملازمین میں تشویش پائی جاتی ہے احتجاجی دھرنا کی قیادت کلاس تھری کے صدر افتخار احمد اور کلاس فور کے صدر عرفان خلیل کر رہے ہیں۔اس موقع پر مظاہرین کا کہنا تھا کہ انتظامیہ ملازمین کے مسائل حل کرنے میں غیر سنجیدگی کا مظاہرہ کر رہے ہے جبکہ چند دنوں سے جاری دھرنا کے حوالے سے انتظامیہ کو ملازمین کے شارٹر آف ڈیمانڈ کا بھی پتیہ نہیں جسے انتظامیہ کی ناہلی واضح ہوتی ہے۔احتجاج ملازمین نے مطالبہ کیا ہے کہ ٹوسٹیپ اپ گریڈیشن بمعہ بقایاجات دی جائے،عید ایڈوانس بحال کیا جائے،فری ایجوکیشن کی سہلوت سمیت ایمپلائز سن کوٹہ بحال کیا جائے،ماسٹر رول ملازمین کو کنٹریکٹ پر کیا جائے جبکہ جن ملازمین کا پوروموشن ٹائم پورا ہو چکا ہے انہیں گریڈ 5پر پروموٹ کیا جائے اور مردان کیمپس میں تعینات ملازمین کو میڈیکل،سبسڈی،ریکوزیشن اور ایجوکیشن کی سہولت دی جائے جبکہ جامعہ میں بحران کے خاتمہ اور خرد برد کی تحقیقات کیلئے اقدامات اٹھائے جائے بصورت دیگر احتجاج جاری رہے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -