سودی نظام کا قیام اللہ تعالیٰ سے جنگ کے مترادف ہے، سینیٹر سراج الحق

  سودی نظام کا قیام اللہ تعالیٰ سے جنگ کے مترادف ہے، سینیٹر سراج الحق

  

تیمرگرہ(بیورورپورٹ) امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ سودی نظام کا قیام اللہ تعالی سے جنگ کے مترادف ہے۔حکومت سودی نظام کے قیام کی بجایے زکواۃ کا نظام قایم کریں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے آبائی گاوں ثمرباغ دیرلویر میں عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہویئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ کورونا وباء سے پوری دنیاء کو سبق سیکھنا اور اپنے رب سے رجوع کرنا چاہیئے موجودہ حکومت نے سوملین روپے کی لاگت سے اسلام آباد میں مندر بنانے کا جو فیصلہ کیا ہے وہ قابل مذمت ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ الخدمت فاونڈیشن داد کا مستحق ہے اور تنظیم کے تمام کارکنان اور رضاء کاروں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں جنہوں نے مخیر حضرات کے امداد سے بڑے پیمانہ پر امدادی کاموں میں حکومت سے بڑھ کر حصہ لیا انہوں نے کہا کہ جو کام حکومت اربوں روپے میں نہ کرسکی الخدمت نے سوہ چار کروڑ چندہ اکھٹا کرکے کر دکھایا۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی کی حکومت قایم ہوئی تو اس کا فائدہ پورے ملک کے عوام اور تمام سیاسی جماعتوں کے کارکنان کو ہوگا۔ان کا۔کہنا تھا کہ تمام سیاسی جماعتوں میں کوئی فرق نہیں سب کا ٹارگٹ کرسی اور حکومت تک پہنچنا ہے تاہم جماعت اسلامی واحد تحریک ہے جو نفاذ شریعت اور عوامی مفادات کیلئے سیاسی میدان میں برسرپیکار ہیں۔ تقریب سے ضلعی امیر اعزازالملک افکاری، سابق ضلعی کونسلر مولانا محمد عمران الجندولی، سابق تحصیل ناظم سعیداحمد باچا و دیگر مشران نے خطاب کیا۔۔مقررین نے کہا کہ کورونا وباء کے شکار لوگ مرے نہیں شہید ہویے ہیں۔ تقریب کے دوران مرحومین کے ایثال ثواب اور ان کے ورثاء کے صبر جمیل کیلئے خصوصی دعائیں کی گئیں۔۔

مزید :

صفحہ اول -