وزیراعلی ہیلتھ سسٹم کو مزید بہتر بنانے کیلئے کوشاں ہیں، شوکت علی یوسفزئی 

وزیراعلی ہیلتھ سسٹم کو مزید بہتر بنانے کیلئے کوشاں ہیں، شوکت علی یوسفزئی 

  

پشاور(سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا کے وزیر محنت اور ثقافت شوکت یوسفزئی نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ محمود خان صوبے میں ہیلتھ سسٹم کو مزید بہتر بنانے میں گہری دلچسپی لے رہے ہیں کیونکہ صحت اور تعلیم ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے۔ ہیلتھ سسٹم کو بہتر سے بہتر بنانے کیلئے صوبائی بجٹ میں کثیر رقوم مختص کر دی گئی ہیں جس سے ہسپتالوں کو جدید خطوط پر استوار کیا جا سکے گا۔ انہوں نے کہا کہ پیرامیڈیکس کا شعبہ انتہائی اہم ہے اور یہ ہسپتالوں میں ریڑھ کی ہڈی، جیسا کردار ادا کرتا ہے کیونکہ مریض کی دیکھ بھال اور اس کے ساتھ ڈاکٹر سے زیادہ وقت پیرامیڈیکس سٹاف کا گزرتا ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ کچھ شعبوں میں پیسہ کمانے سے زیادہ اہمیت عوامی خدمت اور مدد کی ہوتی ہے ان میں سے ایک شعبہ پیرامیڈیکس ہے۔ پیرامیڈیکس کا بہترین اور پروفیشنل رویہ مریض کی صحتیابی میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ وہ ہیلتھ فاؤنڈیشن میں صوبے کے مختلف پرائیوٹ پیرامیڈیکس انسٹیٹیوٹس اور سرکاری ہسپتالوں کے درمیان ٹریننگ کے لیے ہونے والے ایگریمنٹ پر دستخطی کی تقریب میں بطور مہمان خصوصی اظہار خیال کر رہے تھے۔ اس ایگریمنٹ کے تحت صوبے کے مختلف پرائیوٹ پیرامیڈیکل انسٹیٹیوٹس سے فارغ ہونے والے پیرامیڈکس صوبے کے مختلف سرکاری ہسپتالوں میں ٹریننگ حاصل کر سکیں گے۔ تقریب سے خطاب میں شوکت یوسفزئی نے کہا کہ پیرامیڈیکس شعبے میں ترقی کے لیے حکومت ان اداروں کو ہر ممکن تعاون فراہم کرے گی صوبے میں پرائیویٹ انویسٹمنٹ کے لیے بہترین مواقع موجود ہیں وزیر اعلیٰ محمود خان پرائیویٹ انویسٹرز کی صوبے میں بھرپور حوصلہ افزائی کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کی صوبے میں حوصلہ افزائی کرتی ہے کیونکہ حکومت ہر جگہ سرمایہ کاری نہیں کر سکتی اسلئے پرائیوٹ سرمایہ کاروں کے لیے یہاں مواقع زیادہ موجود ہیں۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ اس ایگریمنٹ کے بعد ایک طرف اگر پیرامیڈیکس کو بہترین ہسپتالوں میں ٹریننگ حاصل کرنے کے مواقع ملیں گے۔ تو دوسری طرف ہسپتالوں میں انسانی وسائل کی کمی بھی پوری ہو سکے گی۔ انہوں نے کہا کہ پیرامیڈیکس شعبے میں مزید بہتری لانے کے لیے اس کے نصاب پر نظر ثانی کی ضرورت ہے کیونکہ یہ نصاب لاگو ہوئے بہت عرصہ ہو گیاہے نصاب کو جدید خطوط پر استوار کرنے اور اس کو پیرامیڈیکس کے شعبہ تک ہی مخصوص اور محدود کرنے کی ضرورت ہے۔ ۔۔۔۔۔۔

مزید :

صفحہ اول -