احساس کفالت سنٹر: دھنوٹ، پولیس اہلکار کا غریب خاتون پر وحشیانہ تشدد، لوگوں کا احتجاج 

احساس کفالت سنٹر: دھنوٹ، پولیس اہلکار کا غریب خاتون پر وحشیانہ تشدد، لوگوں ...

  

دھنوٹ (سٹی رپورٹر،نمائندہ خصوصی)دھنوٹ احساس کفالت سنٹر (بقیہ نمبر38صفحہ6پر)

پر پولیس گردی کا تیسراواقعہ ہوا سنٹر  پر تعینات پولیس اہلکار محمد اشفاق کھنڈ خاتون کودھکے رائفل کے بٹ مارتا رہا تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز بستی چبکن کی رہائشی خاتون نسرین بی بی احساس کفالت سنٹر دھنوٹ پر اپنی امدادی رقم وصول کرنے کے لیے پہنچی تو ڈیوٹی پر مامور کانسٹیبل اشفاق نے پہلے دھکے دے کر باہر نکالنے کی  کوشش کی عورت نے جب منت سماجت کی تھی پر اہلکار نے اپنی رائفل کا بٹ مار دیا اور تھپڑوں کی برسات کر دی پولیس اہلکار کے اس رویے کو دیکھتے ہی خاتون کے اہلخانہ شہریوں اور علاقہ کی بڑی تعداد نے روڈ بلاک کر دیا شدید احتجاج کرتے ہوئے ڈی پی او لودھراں سے کانسٹیبل اشفاق کی معطلی کا مطالبہ کیا ہے دوسری جانب سنٹر پر تعینات اہلکاروں کا پولیس گردی کا تیسرا وقوعہ سامنے آچکا ہے اس قبل بھی کانسٹیبل مجتبی شاہ نے شاہد عباس لانگ پر تشدد کیا جبکہ اشفاق کانسٹیبل نے بس عملہ پر تشدد کیا ہے تیسرے وقوعہ کے بعد بھی ڈی پی او لودھراں اور دیگر پولیس کے اعلی حکام کی جانب سے کوئی کاروائی سامنے دیکھنے میں کو نہیں ملی ہے آئے روز دھنوٹ پولیس کی جانب سے بڑھتے ہوئے تشدد کی وجہ سے شہریوں میں خوف کی لہر دوڑ گئی ہے  معززین دھنوٹ  اور ایس ایچ او نے یقین دہانی کرائی کہ ڈی پی او لودھراں نے محمد اشفاق کھنڈ کے خلاف کاروائی عمل میں لائیں گے شہریوں نے روڈ کھول دیاہے۔

نسرین بی بی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -