پولیس ملازمین کی بائیومیٹرک حاضری  ریکارڈ اپ ڈیٹ نہ کرنے پردو محرر معطل

 پولیس ملازمین کی بائیومیٹرک حاضری  ریکارڈ اپ ڈیٹ نہ کرنے پردو محرر معطل

  

  ملتان (  وقا ئع  نگار  ) اصلاحات کے نام پر پولیس میں تاریخی تبدیلی ہوئی۔پولیس کا ملازمین اب غیر (بقیہ نمبر31صفحہ6پر)

حاضری کا دا نہیں مار سکیں گے۔ملتان پولیس سو سال سے زائد عرصہ کے بعد  جوانوں  کی حاضری اب بائیو میٹرک مشین کے ذریعے  لے جائے گی۔ملتان پولیس نے تقریبا ملازمین کی بائیو میٹرک مشین میں ریکارڈ درج کرلیا ہے۔جبکہ دوسری طرف سی پی او ملتان نے بائیو میٹرک مشین میں ریکارڈ اپ ڈیٹنہکرنے پر دو محرر کو معطل کردیا ہے۔پولیس ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کا شروع سے نعرہ تھا۔کہ پولیس نظام میں تبدیلی لائی جائی گی۔اسی حوالے سے پنجاب پولیس میں سو سال سے زائد عرصہ کے بعد تھانوں اور دفتروں سمیت دیگر مقامات پر  تعینات پولیس ملازمین کی حاضری اب بائیو میٹرک مشین کے ذریعے لی جائے گی۔جس کے بعد پولیس جوانوں میں تشویش کی لہر دوڑ پڑی ہے۔ذرائع کے مزید مطابق ملتان پولیس نے گزشتہ روز جوانوں کا بائیو میٹرک مشین میں اپنا تقریبا کوائف درج کروا دیئے ہیں۔جسکے بعد اب مینول حاضری کی بجائے پولیس ملازمین  بائیو میٹرک مشین کے ذریعے اپنی حاضری کو یقینی بنائیں گے۔ذرائع کے مطابق ماضی میں  پولیس افسران کو یہ شکایت عام تھی کہ پولیس  ملازمین اپنی مرضی سے تھانے و دیگر دفاتر میں ڈیوٹی  پر آتے اور جاتے ہیں۔جسکی وجہ سے شہریوں کو حصول ا نصاف میں دقت پیش آتی تھی۔جسکو مد نظر رکھتے ہوئے پنجاب حکومت اور آئی جی پنجاب کی مشترکہ مشاورت کے بعد پولیس کی حاضری کو بذریعہ بائیو میٹرک چیک کرنے کا نظام متعارف کروا دیا ہے۔پولیس افسران اب  پولیس جوانوں کی آمد و جامد کو ملتان سمیت  صوبائی سطح سے مانیٹر کر سکیں گے۔گزشتہ روز سی پی او ملتان نے بائیو میٹرک مشین میں پولیس ملازمین کا ریکارڈ انٹر  نا کرنے پر تھانہ کینٹ اور چہلیک کے محرر کو معطل کردیا ہے۔جو اپنے عہدے پر بحال ہونے کیلئے کوششیں کر رہے ہیں۔

بائیو میٹرک

مزید :

ملتان صفحہ آخر -