سینیٹ، وزراء کی عدم شرکت پر چیئرمین سنجرانی کا اظہار برہمی، اپوزیشن کا احتجاجا واک آؤٹ

سینیٹ، وزراء کی عدم شرکت پر چیئرمین سنجرانی کا اظہار برہمی، اپوزیشن کا ...

  

 اسلام آباد(نیوزایجنسیاں)سینیٹ میں وقفہ سوالات کے دوران متعلقہ وزراء کی عدم موجودگی پر اپوزیشن ارکان نے احتجاجا ایوان سے علامتی واک آؤٹ کیا جبکہ چیئرمین سینیٹ نے متعلقہ وزراء کی عدم موجودگی پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ایکشن لینے کیلئے وزیر اعظم کا خط لکھنے کا اعلان کر دیا جبکہ ایوان کی کارروائی بھی دس منٹ کیلئے ملتوی کر دی، چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ پارلیمنٹ وزرا ء کیلئے انتظار تو نہیں کرسکتی، سینیٹ کو مذاق نہ سمجھیں، وقت پر منسٹر آتے نہیں ہیں،کابینہ اجلاس بھی ختم ہو گیا ہے پھر بھی وزراء  وقت پر نہیں آتے، بعد ازاں وفاقی وزیر برائے توانائی حماد اظہر ایوان میں آگئے اور ارکان کے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ کراچی الیکٹرک کو ساڑھے پانچ سو میگاواٹ کے قریب اضافی بجلی دی جا رہی ہے، وہ اسلئے دی جاری ہے کہ کراچی الیکٹرک کی ضروریات بڑھ چکی ہیں، کچھ ڈسکوز پچھلے دس پندرہ بیس سال کے اندر اپنے نقصانات کم کرنے میں ناکام رہے ہیں، ہمارے مجموعی نقصانات پچھلے دو اڑھائی سال میں کم ہوئے ہیں،کراچی الیکٹرک نے نقصانات کافی حد تک کم کیئے ہیں، ہماری حکومت کا ٹرانسمیشن اور ڈسٹریبیوشن دونوں پر فوکس ہے، پچھلے دو اڑھائی سال میں 77 ارب روپیہ ٹرانسمیشن  اور ڈسٹریبیوشن کی بہتری کیلئے خرچ کیا گیا ہے۔حماد اظہر نے کہا ہے کہ لوڈ شیڈنگ کی وجہ بجلی چوری ہے جہاں بجلی چوری ہوتی ہے وہاں لوڈشیڈنگ زیادہ کرتے ہیں۔کراچی صارفین کو لوڈشیڈنگ سے بچانے کیلئے اضافی بجلی دی جارہی ہے۔نجکاری کے بعد کے الیکڑک کے نقصانات کی شرح میں بہتری آئی ہے۔

سینیٹ

مزید :

صفحہ اول -