جوہری سمجھوتے کی بحالی کیلئے ایران نے امریکہ کے سامنے کڑی شرائط رکھ دیں 

جوہری سمجھوتے کی بحالی کیلئے ایران نے امریکہ کے سامنے کڑی شرائط رکھ دیں 
جوہری سمجھوتے کی بحالی کیلئے ایران نے امریکہ کے سامنے کڑی شرائط رکھ دیں 

  

تہران ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) جوہری سمجھوتے کی بحالی کیلئے ایران نے کڑی شرائط امریکا کے سامنے رکھ دیں ، سپاہ پاسداران انقلاب ایران کا نام دہشتگرد تنظیموں کی فہرست سے خارج کرنے ، رہبر اعلیٰ آیت اللہ خامنہ ای اور نو منتخب صدر ابراہیم رئیسی کے خلاف پابندیوں کا خاتمہ شرائط میں شامل ہے ۔

العربیہ کے مطابق ایرانی وزارت خارجہ کی جانب سے پارلیمان میں کارکردگی رپورٹ پیش کی گئی جس میں کہا گیا کہ ویانا میں ایران اور امریکہا کے درمیان معاملات طے پا جاتے ہیں اور جوہری سمجھوتے کی بحالی کیلئے کوئی سمجھوتہ ہوتا ہے تو امریکہ سپاہ پاسداران انقلاب کو غیر ملکی دہشتگرد تنظیم قرار دینے کا فیصلہ منسوخ کر ے گا ۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ جوہری سمجھوتے کیلئے امریکہ کو ایران کی ایک ہزار شخصیات اور اداروں سے پابندیاں ہٹانا ہوں گی جن میں ایران کے ایک بینک کے سوا تمام مالیاتی ادارے ، انشورنس کمپنیاں ،ایران کی تیل اور پیٹروکیمیکل کی تمام کمپنیاں،ریفائنریاں ، جوہری توانائی تنظیم اور اس سے وابستہ کمپنیاں اور تحقیقاتی ادارے شامل ہیں۔

امریکا نے ان تمام کمپنیوں اور اداروں پر مختلف اقسام کی پابندیاں عائد کررکھی ہیں۔رپورٹ میں کہا گیا کہ امریکہ کو حکم نمبر 13876 کو بھی منسوخ کرنا ہوگا جس کے تحت سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ نے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنہ ای ، ان کے دفتر ، مقرر کردہ ایرانی عہدیداروں پر پابندیاں عائد کی تھیں،جس میں نومنتخب ایرانی صدر ابراہیم رئیسی بھی شامل ہیں جو وہ 5 اگست کو عہدے کا حلف لیں گے۔

یورپی ممالک کی ثالثی کے باعث امریکہ اور ایران کے درمیان ویانا میں اپریل سے بات چیت جاری ہے لیکن جوہری سمجھوتے کی بحالی بارے کوئی فیصلہ تاحال نہیں ہوا ہے ، دونوں ممالک کے وفود کے درمیان بات چیت کا چھٹا دور 20 جون کو ختم ہوا تھا لیکن ابھی انہوں نے مذاکرات کے نئے دور کیلئے کوئی تاریخ مقرر نہیں کی۔

دوسری جانب ترجمان امریکی محکمہ نیڈ پرائس کا کہنا ہے کہ واشنگٹن مذاکرات کے ساتویں دور سے متعلق کوئی ڈیڈ لائن نہیں دے گا کیوں کہ اب ایران تعین کرے کہ مذاکرات کا اگلا مرحلہ کب شروع ہونا چاہئے۔

مزید :

اہم خبریں -بین الاقوامی -