جنوبی افریقہ میں سابق صدرکو جیل بھیجنے پر ہنگامے پھوٹ پڑے، 72افراد لقمہ اجل بن گئے

جنوبی افریقہ میں سابق صدرکو جیل بھیجنے پر ہنگامے پھوٹ پڑے، 72افراد لقمہ اجل ...
جنوبی افریقہ میں سابق صدرکو جیل بھیجنے پر ہنگامے پھوٹ پڑے، 72افراد لقمہ اجل بن گئے
سورس: Twitter/enemyslayer24_7

  

کیپ ٹاﺅن(مانیٹرنگ ڈیسک) جنوبی افریقہ میں سابق صدر جیکب زوما کو جیل بھیجنے پر پھوٹنے والے پرتشدد ہنگاموں میں 72افراد لقمہ اجل بن گئے۔ میل آن لائن کے مطابق جیکب زوما کی گرفتاری کے بعد ملک میں ہنگامے پھوٹ پڑے اور مظاہرین نے شاپنگ مالز، بینک اور دفاتر لوٹنے شروع کر دیئے۔ دکانداروں کی طرف سے لوٹ مار کرنے والے مظاہرین پر فائرنگ کی گئی، جس میں ہلاکتیں ہوئی اور کئی شاپنگ مالز میں بھگدڑ مچنے پر کئی لوگ کچل کر ہلاک ہو گئے۔ ایک شاپنگ مال سے 10افراد کی لاشیں ملی ہیں۔جنوبی افریقہ کے صوبے کوازولو نیتل اور گواتینگ ان فسادات کا مرکز بنے ہوئے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ہنگاموں پر قابو پانے کے لیے فوج کو بھی طلب کر لیا گیا ہے۔ پولیس اور فوج مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے ربڑ کی گولیوں کا بھی استعمال کر رہی ہیں۔ ایک اندازے کے مطابق اب تک 800سے زائد لوگوں کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔ واضح رہے کہ جیکب زوما پر اپنے دور صدارت کے دوران مبینہ کرپشن کے حوالے سے ہونے والی تحقیقات میں پیش نہ ہونے اور توہین عدالت کرنے کا الزام ہے۔ انہوں نے گزشتہ ہفتے خود کو پولیس کے حوالے کیا تھا جس کے بعد سے ہنگامے جاری ہیں۔ 

مزید :

بین الاقوامی -