ممبران اسمبلی کو ڈاکو کہہ کرمستعفی ہونا اور واپس آنے کی پالیسی سے پارلیمنٹ بے توقیر ہوتی ہے:مریم اورنگزیب

ممبران اسمبلی کو ڈاکو کہہ کرمستعفی ہونا اور واپس آنے کی پالیسی سے پارلیمنٹ ...
ممبران اسمبلی کو ڈاکو کہہ کرمستعفی ہونا اور واپس آنے کی پالیسی سے پارلیمنٹ بے توقیر ہوتی ہے:مریم اورنگزیب

  


اسلام آباد(صباح نیوز)وزیر مملکت اطلاعات مریم اورنگزیب نے واضح کیا ہے کہ جب کچھ پارلیمینٹرین دوسرے پارلیمینٹرین کو ڈاکو کہتے ہیں اور استعفیٰ دے کر پھر واپس آجاتے ہیں تو اس وقت پارلیمنٹ کی قدروقیمت بے توقیر ہوتی ہے، پارلیمنٹ کی عزت اور قدرومنزلت حکومت نہیں اراکین پارلیمنٹ کرواتے ہیں۔

بلاول بھٹو کی زیر صدارت پارٹی اجلاس ،جے آئی ٹی کے سامنے وزیراعظم کی پیشی اور ممکنہ صورتحال پر غور

نجی ٹی وی کے پروگرام میں اظہار خیال کرتے ہوئے مریم اورنگزیب کا کہنا تھاکہ اپوزیشن اور حکومت دونوں مل کر ہی پارلیمنٹ کو مضبوط بناسکتے ہیں اگر حکومت تنہاچاہے بھی تو وہ پارلیمنٹ کو مضبوط نہیں کرسکتی۔ سوالات کرکے پارلیمنٹ سے بائیکاٹ کرنا سیاست ہوتی ہے اگر واقعی آپ کو سوالات کے جوابات چاہیے تو پارلیمنٹ میں ہی بیٹھیں تاکہ آپ کو اپنے سوالات کے جوابات مل جائیں لیکن جہاں تک سعودی الائنس کا تعلق ہے تو اس بارے میں وزیردفاع آگاہ کرچکے ہیں۔ مریم اورنگزیب نے کہا کہ وزیراعظم نے پہلے ہی دن کہہ دیا تھا کہ جے آئی ٹی بنادیں وہ تیسری دفعہ منتخب وزیراعظم ہیں انہیں اچھی طرح معلوم ہے کہ جے آئی ٹی کس طرح کام کرتی ہے اگر اس میں تحفظات ہیں تو اس کیلئے شریف فیملی کو قانونی اور آئینی حق حاصل ہے کہ وہ ان تحفظات کا اظہار کرے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سپیکر قومی اسمبلی کی کارروائی لائیو سٹریمنگ کے ذریعے دکھا سکتے ہیں،جس طرح چیئرمین سینٹ نے لائیو اسٹریمنگ کا آپشن دے رکھا ہے اسی طرح قومی اسمبلی بھی لائیو سٹریمنگ کا آپشن ہونا چاہیے۔ سپیکر ایاز صادق اور میں نے حال ہی میں اس بات پر غور کیا ہے کہ ہم کیسے لائیو اسٹریمنگ کو ممکن بنا سکتے ہیں۔ اس کیلئے یاتو پارلیمنٹ کا اپنا چینل ہونا چاہیے تاکہ عوام کے منتخب نمائندے جو کچھ کہہ رہے ہوں عوام کی ان تک رسائی ہو کیونکہ وزیراعظم اور حکومت یہ سمجھتی ہے کہ جس طرح ادارے ملوث ہورہے ہیں اور پارلیمنٹ میں لوگوں سے متعلق بحث ہوتی ہے وہ لوگوں تک پہنچنی چاہیے۔

مزید : قومی


loading...