ٹرن اوور ٹیکس ریٹ میں اضافہ مسترد کرتے ہیں، راجہ عامر اقبال

ٹرن اوور ٹیکس ریٹ میں اضافہ مسترد کرتے ہیں، راجہ عامر اقبال

راولپنڈی(کامرس ڈیسک) بجٹ 2017-18 پر شدید تحفظات ہیں حکومتی مجوزہ اقدامات سے پیداواری لاگت میں اضافہ ہو گا اور کاروبار کرنا مشکل ہو جائے گا ٹرن اوور ٹیکس ریٹ میں اضافہ مسترد کرتے ہیں فنانس بل کی سیکشن 119چیپٹر 12 کے تحت ود ہولڈنگ ایجنٹ اگر کمپلائنس نہیں کرتا تو جرمانے کے ساتھ ساتھ اسے قید کی سزا بھی دی جا سکتی ہے یہ سراسر زیادتی ہے ہمارا مطالبہ ہے کہ اسے واپس کیا جائے یہ غیر مناسب اقدام ہے اور ٹیکس کولیکشن کی روح کے منافی ہے Taxbaseبڑھانے کے بجائے حکومت پہلے سے موجود ٹیکس دہندگان پر گھیرا تنگ کر رہی ہے دہرے ٹیکسوں نے کاروباری برادری کی کمر توڑ دی ہے ایف بی آر ہر دوسرے مہینے ایڈوانس ٹیکس جمع کروانے کے نوٹس بھیج رہا ہے ہم کاروبار کریں یا ٹیکس دفاتر کے چکر کاٹیں ان خیالات کا اظہار راولپنڈی چیمبر آف کامرس کے صدر راجہ عامر اقبال نے چیمبر میں تاجروں اجلاس سے خطا ب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ سیلز ٹیکس کی سیکشن 74Aاور انکم ٹیکس کی سیکشن 221Aکے تحت فنانس بل کو کسی بھی عدالت میں چیلنج نہیں کیا جا سکتا یہ بنیادی حقوق کے خلاف ہے ہم انصاف کے لیے کہاں جائیں۔

راجہ عامر اقبال نے کہا کہ ترقیاتی بجٹ کے ایک ہزار ارب سے زائد رقم مختص کرنا خوش آئند ہے تاہم اسے سیاسی مفاد اور الیکشن کی نذر نہ کیا جائے، عوامی فلاحی اور انفراسٹرکچر کے ان منصوبوں کو ترجیح دی جائے جو قابل عمل اور اشد ضروری ہوں اس موقع پر سینئر نائب صدر راشد وائیں ، نائب صدر عاصم ملک، سابق صدور، انجمن تاجران کے نمائندے ،مجلس عاملہ کے اراکین، ریونیو امور کمیٹی کے نائب چیئر مین شہزاد احمد ملک،شوکت بلوچ اوردیگر چیمبر ممبران بھی موجود تھے

مزید : کامرس


loading...