بھارت ، ہندو ملازم کا روزے دار مسلم خاتون پر تشدد

بھارت ، ہندو ملازم کا روزے دار مسلم خاتون پر تشدد

نئی دہلی(صباح نیوز)بھارتی ریاست کرناٹکا میں ہندو ملازم نے اپنی ساتھی ملازم مسلم خاتون کو روزے میں تشدد کا نشانہ بنا ڈالا۔ بھارتی میڈیا پر چلنے والی سی سی ٹی وی فوٹیج میں ایک شخص کو خاتون کو زور دار لات مارتے دکھایا گیا ہے۔بھارتی میڈیا کے مطابق یہ واقعہ ریاست کرناٹکا کے ضلع سندھونر کے میونسپل دفتر میں پیش آیا اور اسے کیمرے کی آنکھ نے محفوظ کرلیا۔پولیس کے مطابق نسرین نامی خاتون نے واقعے کی شکایت درج کرائی جس میں خاتون نے بتایا کہ جب یہ واقعہ ہوا وہ اس وقت روزے کی حالت سے تھی۔میونسپل حکام نے بتایا کہ واقعہ گزشتہ ہفتے پیش آیا اور اس میں ملوث شخص کا نام شراناپا ہے جو ادارے میں عارضی ملازم ہے جب کہ نسرین مستقل ملازم ہے۔پولیس نے خاتون کی شکایت کے بعد شرناپا کو گرفتار کرلیا ۔

جب کہ میونسپل حکام نے اسے ملازمت سے بھی برطرف کردیا۔میونسپل حکام کا کہنا تھا کہ جس روز واقعہ ہوا اس دن دفتر میں چھٹی تھی تاہم کچھ ضروری کام کی بنا پر دونوں ملازمین کو بلایا گیا تھا اس لیے واقعے سے متعلق متاثرہ خاتون ہی وضاحت کرسکتی ہیں۔پولیس کے مطابق نسرین نے بتایا کہ وہ دفتر میں کام کی وجہ سے دیر تک موجود تھی کہ اس دوران اس کے اور شرناپا کے درمیان معمولی بحث ہوئی اور شرناپا نے اسے زور دار لات دے ماری اور اس بات کا بھی لحاظ نہیں کیا کہ وہ روزے کی حالت سے ہے۔پولیس کا کہنا ہیکہ شرناپا کی جانب سے ساتھی ملازم پر حملے کا یہ پہلا واقعہ نہیں ہے۔

مسلم خاتون تشدد

مزید : علاقائی


loading...