انجمن شہریان لاہور کے بانی اور سیاسی و سماجی رہنما رانا نذر الرحمن انتقال کر گئے

انجمن شہریان لاہور کے بانی اور سیاسی و سماجی رہنما رانا نذر الرحمن انتقال کر ...
 انجمن شہریان لاہور کے بانی اور سیاسی و سماجی رہنما رانا نذر الرحمن انتقال کر گئے

  


لاہور (سٹاف رپورٹر) انجمن شہریان لاہور کے بانی صدر اور بزرگ سیاسی و سماجی رہنما رانا نذر الرحمن 93 سال کی عمر میں انتقال کرگئے وہ کچھ عرصہ سے علیل اور مقامی ہسپتال میں زیر علاج تھے۔ مرحوم نے دو بیٹوں، 3 بیٹیوں اور درجنوں پوتے، پوتیاں‘ نواسے، نواسیاں سوگوار چھوڑے ہیں۔ مرحوم کا جنازہ آج (بروز بدھ)دوپہر ایک بجے ان کے بیٹے زوہیر رانا کی رہائش گاہ واقع 32-B ٹیکس سوسائٹی بالمقابل ڈاکٹر ہسپتال لاہور سے اٹھایا جائے گا اور نماز جنازہ بعد از نماز ظہر ٹیکس سوسائٹی کی مرکزی جامع مسجد میں ادا کی جائے گی۔ مرحوم ایک معروف اور ممتاز سیاسی کارکن کے طور پر جانے جاتے تھے جنہوں نے اپنی سیاست کا آغاز پاکستان جمہوری پارٹی سے کیا اور ان کا شمار بابائے جمہوریت نوابزادہ نصراللہ خان کے دست راست میں ہوتا تھا۔ اس سے پہلے چو دھری محمد علی کی نظا م اسلا م پارٹی کے رکن تھے۔ رانا نذر الرحمن نے ملک کی قدآور سیاسی شخصیات کے ساتھ سرگرم اور بھرپور خدمات انجام دیں۔ کئی بار پابند سلاسل بھی ہوئے اور ایک کامیاب بزنس مین کے طور پر بھی خوب نام کمایا۔ مرحوم سائنسی آلات کی درآمد، برآمد اور فروخت کا کاروبار کیا کرتے تھے اور اس شعبے میں انہیں ایک نامور بزنس مین کی حیثیت حاصل تھی۔ رانا نذر الرحمن ایک صاحب طرز ادیب اور تجزیہ کار بھی تھے۔ معرکۃ الآرا تصنیف ’’صبح کرنا شام کا‘‘ میں مرحوم نے اورل ہسٹری کا بہترین شاہکار تخلیق کیا ہے۔ وہ دوسری کتاب بھی لکھنا چاہتے تھے لیکن عمر کے آخری ایام میں بیماری اور موت نے مہلت نہ دی وہ دو ماہ قبل تک خوب چاق و چوبند اور اپنی زندگی کے معمولات میں سرگرم رہے تاہم گزشتہ ماہ بڑھاپے کی وجہ سے یادداشت کمزور پڑگئی اور نحیف بھی ہوگئے تھے۔ روزنامہ پاکستان کے سنڈے میگزین ’’زندگی‘‘ میں ان کی کتاب سے 50 قسطوں پر مشتمل اقتباسات بھی شائع ہوتے رہے جسے خوب عوامی پذیرائی بھی حاصل ہوئی۔ سقوط مشرقی پاکستان سے قبل مرحوم متحدہ پاکستان کے وقت کاروباری سلسلے میں اکثرڈھاکہ بھی جایا کرتے تھے اور کاروباری شخصیت کے طور پر مشرقی پاکستان میں شہرت حاصل تھی۔ رانا نذر الرحمن کا تعلق حافظ آباد کے گاؤں سے تھا لیکن ابتدائی تعلیم کے دنوں میں ہی آبائی علاقے کو خیرباد کہہ کر لاہور آگئے۔ ان کے ایک بیٹے ڈاکٹر سہیل رانا امریکہ میں ایک بڑی میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر ہیں جبکہ ایک بیٹی بھی امریکہ میں مقیم ہیں۔

انتقال/ رانا نذر الرحمن

مزید : صفحہ اول


loading...