نیب ملک کو کرپشن فری بنانے کیلئے بدعنوانی کیخلاف عدم برداشت کی پالیسی پر کار بند ہے: قمر زمان چودھری

نیب ملک کو کرپشن فری بنانے کیلئے بدعنوانی کیخلاف عدم برداشت کی پالیسی پر کار ...

اسلام آباد ( آن لائن ) قومی احتساب بیورو کے چیئرمین قمر زمان چوہدری نے کہا ہے قومی احتساب بیورو(نیب ) نے بدعنوانی سے آہنی ہاتھوں نمٹنے کا عزم کررکھاہے، نیب نے پاکستان کو کرپشن فری بنانے کیلئے ہر قسم کی بدعنوانی کیخلاف عدم برداشت کی پالیسی اختیار کر رکھی ہے ۔گزشتہ روز نیب ہیڈکوارٹرز میں ماہانہ کوارڈینیشن اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انکا مزید کہنا تھا خوشحال پاکستان کی راہ میں بدعنوانی سے بڑی رکاوٹ ہے ،اس کے خاتمے کیلئے کوششوں کے ضمن میں نیب کو اعلیٰ ادارے کا درجہ دیا گیاہے اورکرپشن کیخلاف اقدامات ،بدعنوا ن عناصر سے معصوم شہریوں سے لوٹی جانیوالی رقوم کی واپسی کا مینڈیٹ ملا ہے۔ بدعنوانی کیخلاف ملک گیر انسداد بدعنوانی حکمت عملی کے تحت نیب کو شہریوں اورمختلف سرکاری اورنجی اداروں کی جانب سے 3 لاکھ 43ہزار 356 شکایات موصول ہوئی ہیں،جن میں سے 11581 شکایات کی جانچ پڑتال، 7587 انکوائریاں اور 3846 انوسٹی گیشن کی منظوری دی جبکہ متعلقہ احتساب عدالتوں میں 2808 ریفرنس دائر کئے گئے ہیں اور سزا کی مجموعی شرح 76 فیصد ہے۔ نیب نے اپنے قیام سے اب تک لوٹے گئے 287.763 ارب روپے بدعنوان عناصر سے وصول کرکے قومی خزانہ میں جمع کرائے ہیں۔جعلی منافع بخش سکیموں،بنک فراڈ،بنک قرضوں کی جان بوجھ کر ڈیفالٹ ہونے، اختیارات کا ناجائز استعمال،اورحکومتی عہدیداروں کی جانب سے سرکاری فنڈز میں خرد برد جیسے معاملات پر نیب کی خصوصی نظر ہے۔ گزشتہ تین برسوں سے نیب کے تمام شعبوں سے وابستہ افسران، ماہرین اوراہلکاروں نے جانفشانی اورلگن سے کام کر رہے ہیں ،جس سے نیب پر عوام کے اعتماد میں اضافہ ہورہاہے،پلڈاٹ نے اپنی ایک رپورٹ میں کہا ہے 42فیصد لوگ نیب پر اعتماد کرتے ہیں ۔ 30فیصد پولیس جبکہ 29فیصد حکومتی حکام پر اعتماد کررہے ہیں۔ چیئرمین نیب نے کہا ٹرانسپرنسی انٹر نیشنل کی کرپشن پرسپشن انڈیکس (سی پی آئی) کی حالیہ رپورٹ میں پاکستان126ویں سے 116ویں نمبر پر آگیاہے، پاکستان نے نیب کی کوششوں سے یہ کامیابی حاصل کی ہے ۔

مزید : صفحہ آخر


loading...