جمشید دستی پر جیل میں تشدد کیخلاف عدالت عالیہ ملتان بنچ میں درخواست دائر

جمشید دستی پر جیل میں تشدد کیخلاف عدالت عالیہ ملتان بنچ میں درخواست دائر

ملتان (خبر نگار خصوصی) ممبرقومی اسمبلی جمشیداحمدخان دستی کی والدہ کی جانب سے خاندان کے افرادکو ملاقات کی اجازت نہ دینے اورمذکورہ ممبرپرجیل تشددکرنے کے خلاف (بقیہ نمبر34صفحہ12پر )

درخواست عدالت عالیہ ملتان بینچ میں دائر کردی گئی ہے۔فاضل عدالت میں مذکورہ ممبرقومی اسمبلی کی والدہ غلام سکینہ نے وکیل محمدعامرخان بھٹہ کی جانب سے درخواست دائر کی گئی ہے کہ اس کے بیٹے ممبرقومی اسمبلی جمشیداحمدخان دستی کو 9 جون کو مختلف مقدمات میں گرفتارکرکے ڈسٹرکٹ جیل مظفرگڑھ بھجوادیا گیا جس کے بعداگلے روزسنٹرل جیل ملتان اوراب 12 جون کی رات ڈی جی خان سنٹرل جیل منتقل کیاگیاہے۔لیکن اس دوران خاندان کے افرادکو اس سے ملنے کی اجازت بھی نہیں دی گئی ہے اورنہ ہی بنیادی ضروریات کی اشیاء فراہم کرنے دی جارہی ہیں نیز اس کے بیٹے پر جیل میں تشددکیاجارہا ہے جو بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہے اوراس کے بیٹے کو صرف علاقہ میں ناانصافیوں کے خلاف آوازبلند کرنے پر سزادی جارہی ہے اورملاقات بھی نہیں کرنے دی جارہی ہے اس لئے خاندان کے افرادکو ملاقات کرنے کی اجازت دینے کا حکم دیاجائے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...