طلبہ کے ڈراپ آؤٹ کی شرح میں تشویشناک حد تک اضافہ

طلبہ کے ڈراپ آؤٹ کی شرح میں تشویشناک حد تک اضافہ

ملتان(سٹاف رپورٹر) ملتان سمیت صوبہ پنجاب میں طلبہ کے ڈراپ آؤٹ کی شرح تشویشناک حد تک بڑھ گئی بتایا گیا ہے کہ ملتان سمیت صوبے بھر میں طلبہ کے ڈراپ آؤٹ کی شرح تشویشناک حد تک بڑھ گئی ہے جس کا نوٹس لیتے ہوئے سیکرٹری تعلیم سکولز نے تمام سی ای او ز کو مراسلہ بھیج دیا ہے۔ معلوم ہو ہے کہ ملتان کے 924 سکولوں میں دوسری اورچھٹی کلاس کا ڈراپ آؤٹ 11ہزار 284 طلبہ رہا ، ایلمنٹری سکولز (زنانہ ) جن کی تعداد 523 ہے ‘ وہاں سے 6ہزار 324، ایلمنٹری مردانہ سکولزجن کی تعداد 306 ہے‘ وہاں سے تین ہزار 372طلبا ڈراپ ہوئے ،95ہائی اور ہائر سکینڈری سکول میں ایک (بقیہ نمبر42صفحہ7پر )

ہزار 588طلبا سکول چھوڑ گئے ،واضح رہے پورے پنجاب میں رواں برس داخلہ مہم کے دوسرے فیز میں ٹارگٹ 24لاکھ 89ہزار 244 طلبہ تھا جن کو پہلی کلاس میں داخلہ دیناتھا ، جبکہ چھٹی کلاس سے 10 ویں کلاس میں طلبا کی تعداد کا ہدف 38لاکھ روپے مقرر کیاگیا‘ اس کے علاوہ 11ویں اور 12ویں جماعت میں انٹرولڈ طلبا کا ہدف ایک لاکھ 23 ہزار مقرر کیا گیا تھا‘ یہ تمام ہدف وزیر اعلیٰ پنجاب کے ویژن 2015۔30کے تحت مقرر کئے گئے تھے ۔ اس میں ناکامی پر سی ای اوز کو ہدایت کی گئی کہ وہ تمام ڈپٹی ڈٰ ی ای اوز زنانہ مردانہ ،اے ای اوز ، ہیڈماسٹر ز اورمتعلقہ کلاس انچارج سے وضاحت طلب کریں اور رپورٹ ارسال کریں تاکہ ان کیخلاف کارروائی عمل میں لائی جاسکے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...