مہمند ایجنسی ،شناختی کارڈ ،ڈومیسائل اور پاسپورٹ وغیرہ کی ویریفیکیشن تا حکم ثانی بند

مہمند ایجنسی ،شناختی کارڈ ،ڈومیسائل اور پاسپورٹ وغیرہ کی ویریفیکیشن تا حکم ...

مہمند ایجنسی(نمائندہ پاکستان)مہمند ایجنسی پولیٹیکل انتظامیہ نے سکروٹنی تک بائزئی سب ڈویژن کی شناختی کارڈ، ڈومیسائل اور پاسپورٹ وغیرہ کی ویریفیکیشن تا حکم ثانی بند کردی۔جعلی اور غیر مقامی افراد کو سرکاری دستاویزات کی فراہمی کے الزامات کی تحقیقات کیلئے انکوائری قائم،جمعرات کو پولیٹیکل انتظامیہ، نادرا، پاسپورٹ اور ڈومی سائل کے ذمہ داران پر مشتمل کمیٹی جائزہ لے گی۔تحصیل خویزئی اور تحصیل بائزئی کے تحصیلداران کو بھی شناختی اسناد کی تصدیق سے روک دیا گیاہے، اے پی اے پیر عبداللہ شاہ۔ تفصیلات کے مطابق مہمند ایجنسی میں پولیٹیکل انتظامیہ نے بائزئی سب ڈویژن کے دونوں تحصیلوں خویزئی اور بائزئی کے عوام کے لئے شناختی کارڈز سمیت تمام تصدیقی اسناد کی فراہمی اور دستخطی سے تا حکم ثانی روک دیا ہے ۔ اس حوالے سے اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹ بائزئی سب ڈویژن پیر عبداللہ شاہ نے بتا یا کہ گزشتہ دنوں بائزئی سب ڈویژن کے حوالے سے جعلی ویریفیکیشن کی باز گشت اور الزامات پر پولیٹیکل انتظامیہ کے تحصیلداران ، پولیٹیکل محرران اور مقامی ملکان کو تمام عوامی شناختی کارڈز، ڈومی سائل ، پاسپورٹ، فارم بی اور کورٹ ڈگری کی تصدیق اور دستخظوں سے تا حکم ثانی روک دیا ہے۔ اور اس حوالے سے پولیٹیکل تحصیلداران ، نادرا ، پاسپورٹ ذمہ داران پر مشتمل کمیٹی 15 جون بروز جمعرات مشترکہ میٹینگ میں انکوائری کا آغاز کرے گی۔ جس میں جعل سازی کی نشاندہی کرنے والوں سے بھی معلومات لی جائیگی ۔ انہوں نے کہا کہ نادرا نے مہمند ایجنسی کے کافی شناختی کارڈز بلاک کر رکھے ہیں ۔ جس کی ری ویریفیکیشن کے لئے پولیٹیکل انظامیہ کی دفاتر اور نادرا سنٹرز پر رش بڑھ گیا ہے۔ اب جعلی ویریفیکیشن کی نشاندہی پر تحقیقات کا آغا کر دیا گیا ہے۔ انکوائری میں کسی قسم کی جعل سازی یاغیر متعلقہ اور غیرمقامی لوگوں کی تصدیق کرنے والے کی نشاندہی ہو نے کے بعد سرکاری اہلکاروں اور ملکان کے خلاف سخت کاروائی کی جائیگی۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...