تعلیم اور صحت کے شعبوں کو ترجیح حاصل ہے :محمد عاطف خان

تعلیم اور صحت کے شعبوں کو ترجیح حاصل ہے :محمد عاطف خان

پشاور( سٹاف رپورٹر )خیبر پختونخوا کے وزیر ابتدائی و ثانوی تعلیم اور توانائی محمد عاطف خان نے کہا ہے کہ موجودہ صوبائی حکومت نے 40ہزار نئے اساتذہ اسکولوں میں بھرتی کئے جبکہ 15ہزار مزید اساتذہ مالی سال 2017-18 میں بھرتی کئے جائیں گے، موجودہ صوبائی حکومت سرکاری اسکولوں میں 35طلباء کیلئے ایک استاد کی پالیسی کے مطابق صوبہ بھر میں اساتذہ کی کمی کو پورا کر رہی ہے ۔ یہ بات انہوں نے منگل کے روز سول سیکرٹریٹ پشاور میں مردان پریس کلب کے عہدیداروں سے ملاقات کے دوران کی، اس موقع پر انہوں نے مردان پریس کلب کے صدر ایم بشیر عادل کو صوبائی حکومت کی جانب سے 50لاکھ رہ میںrوپے گرانٹ کا چیک بھی پیش کیا، اس موقع پر سیکرٹری اطلاعات و تعلقات عامہ ارشد مجید مہمند بھی موجود تھے۔ وفد سے گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ موجودہ صوبائی حکومت نے صحت اور تعلیم کے شعبہ کی بہتری کو اپنی اولین ترجیحات میں رکھا ہے جس کا اندازہ اس سے لگایا جا سکتا ہے کہ گزشتہ دور حکومت میں شعبہ تعلیم کے لئے 63ارب روپے فنڈ تھا جبکہ تحریک انصاف کی موجودہ حکومت نے شعبہ تعلیم کے فنڈ کو بڑھا کر 137ارب روپے کر دیا ہے، انہوں نے کہا کہ توانائی کے شعبہ میں صوبہ میں 350 منی مائیکرو ہائیڈل پاور منصوبوں پر کام جاری ہے جس میں سے 200منی مائیکرو ہائیڈل پاور منصوبے مکمل ہو چکے ہیں جس سے 33میگا واٹ بجلی پیدا ہو گی اس کے علاوہ 2000 میگاواٹ بجلی پیدا کرنے کی استعداد رکھنے والے ہائیڈل پاور منصوبوں پر بھی کام جاری ہے، صوبائی وزیر تعلیم کا کہنا تھا کہ ضلع مردان میں انجئیرنگ یونیورسٹی کا قیام عمل میں لایا جا رہا ہے، 3ارب روپے کی لاگت سے گرلز کیڈٹ کالج کا قیام، 58کروڑ روپے کی لاگت سے مردان فلائی اوور کی تعمیر سمیت دیگر منصوبوں پر کام جاری ہے، انہوں نے کہ موجودہ صوبائی حکومت نے نیک نیتی سے ایک کرپٹ نظام کی تبدیلی کے لئے اپنی توانائیاں صرف کی ہیں اور اس تبدیلی کے اثرات صوبہ میں محسوس کئے جا رہے ہیں، موجودہ حکومت نے قوانین سازی کے ذریعئے اداروں کی کارکردگی کو بہتر بنایا ہے، کرپشن کا مکمل خاتمہ کر کے میرٹ اور انصاف پر مبنی فیصلے کئے گئے ہیں، صوبہ بھر میں میرٹ پر ملازمتیں فراہم کی گئی ہیں اور تمام اداروں میں کسی بھی قسم کی سیاسی مداخلت کو ہمیشہ کے لئے ختم کر دیا گیا ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...