سندھ اینگرو کو ل مائننگ نے وکریو بحالی اسکیم کا افتتاح کیا

سندھ اینگرو کو ل مائننگ نے وکریو بحالی اسکیم کا افتتاح کیا

کراچی(اسٹاف رپورٹر) سندھ اینگرو کول مائننگ کمپنی کی جانب سے قائم کردہ غیر منافع بخش تھر فاؤنڈیشن نے ضلع تھرپارکر کے علاقے اسلام کوٹ کے گاؤں وکریو میں آگ سے متاثرہ گھروں کی بحالی کے لیے بنائی گئی اسکیم کا منگل کے روز افتتاح کیا۔اس اسکیم کا افتتاح وکریو گاؤں میں منعقدہ ایک تقریب میں ہوا جس میں تھر فاؤنڈیشن کے چیف ایگزیکٹو آفیسر شمس الدین احمد شیخ نے وکریو کے رہائشیوں کے ہمراہ افتتاح کیا۔گاؤں والوں نے ایک مہینے کے عرصے میں ان کے گھروں کی بحالی اور مقررہ مدت کے دوران انہیں خوراک اور پینے کے پانی کی فراہمی پر تھر فاؤنڈیشن کی کوششوں کو سراہا۔ جو افراد بحالی کے عمل میں شریک رہے انہیں فاؤنڈیشن کی جانب سے انعامات دیے گئے۔ تفصیلات کے مطابق اوڈانی گاؤں میں اسی طرح کی آگ سے کئی گھر متاثر ہوئے تھے جس کے بعد تھر فاؤنڈیشن نے متاثرہ گھروں کی کامیابی کے ساتھ بحالی کا کام اپنے ذمے لیا تھا اور اس کے کچھ دن بعد شمس الدین شیخ اور گاؤں والوں نے وکریو کی بحالی اسکیم کا افتتاح کیا۔افتتاحی تقریب کے موقع پر یار محمد جھانجی، گیان میگھوار، محمد الف جھانجی، مادھو میگھوار، بچایو خمیسو، آتم مادھو، حکیم محمد، نانگو ساہو، جاگن جھانجی، تیرٹھ میگھوار، دولت میگھوار، راسو میگھوار، سلطان جھانجی، ہارون جھانجی اور دیال میگھوار کے درمیان دوسروں سے بہتر چونرس (جھگی) تیار کرنے پر نقد انعامات تقسیم کیے گئے۔اس موقع پر عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے شیخ نے کہا کہ مشکل وقتوں میں اپنے پڑوسیوں کی مدد کرنا اور ان کا سہارا بننا ان کی ذمہ داری ہو جاتی ہے۔ گاؤں والے اس مشکل گھڑی کا بہادری اور حوصلے سے سامنا کرنے پر خراج تحسین کے مستحق ہیں۔انہوں نے بحالی کے عمل کے دوران گاؤں والوں کو خوراک اور پینے کے پانی کی فراہمی اور برادری کو بحفاظت لے کر چلنے پر گاؤں کی انتظامی کمیٹی کے کاموں کو سراہتے ہوئے اسے مثالی قرار دیا۔شیخ نے مزید کہا کہ یہ گاؤں بلاک II کی حدود میں شامل نہیں جہاں سندھ اینگرو اپنی سرگرمیاں انجام دینے کا پابند ہے لیکن اس کے باوجود تھر فاؤنڈیشن نے کمیونٹی کو انسانی ہمدردی کی بنیاد پر سہارا فراہم کیا اور ہم مستقبل میں بھی اس عمل کو جاری رکھیں گے۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے تھر فاؤنڈیشن کے چیف آپریٹنگ آفیسر بریگیڈیئر (ریٹائرڈ) طارق لکھیار نے کہا کہ بحالی کی سرگرمیاں منظم انداز میں انجام دی گئیں جو انتظامی کمیٹی کے بنتے ہی شروع کر دی گئی تھیں۔ اراکین کی طرح گاؤں والوں کے ساتھ ساتھ تھر فاؤنڈیشن کی ٹیم بھی متفقہ طور پر ایک صفحے پر موجود ہے اور تمام سرگرمیاں ہر کسی کی رضامندی کے بعد انجام دی گئیں۔گاؤں کی انتظامی کمیٹی کے سربراہ اکبر علی جھانجی نے کہا کہ سندھ اینگرو نہ صرف آگ بجھانے کے لیے آگے بڑھی بلکہ انہوں نے پکا ہوا کھانا اور پینے کا ٹھنڈا پانی فراہم کرکے جھلساتی ہوئی گرمی کے دنوں میں بہت سی جانوں کو بھی بچایا۔انہوں نے مزید کہا کہ کمپنی کے حکام نے یقین دہانی کروائی کہ وہ گاؤں کے دورے کر کے امدادی اور بحالی کی تمام سرگرمیوں سے باخبر تھے۔ انہوں نے کہا کہ گاؤں والے متفقہ طور پر تھر فاؤنڈیشن سے تعمیراتی مواد لے کر اپنا گھر تعمیر کرنے پر رضامند تھے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...